Sunday , July 22 2018
Home / شہر کی خبریں / امبیڈکر اوپن یونیورسٹی میںاردو نصابی کتب کی جلد فراہمی

امبیڈکر اوپن یونیورسٹی میںاردو نصابی کتب کی جلد فراہمی

ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی کی وائس چانسلر سیتا راما راؤ سے بات چیت، نصاب کی تیاری میں تاخیر پر ناراضگی
حیدرآباد۔15۔ فروری (سیاست نیوز) ڈاکٹر بی آر امبیڈکر اوپن یونیورسٹی میں اردو نصابی کتب کی تیاری کے سلسلہ میں تساہل کی اطلاعات پر ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے وائس چانسلر پروفیسر سیتا راما راؤ سے بات چیت کی اور انہیں نصابی کتب کی جلد تیاری کی ہدایت دی۔ ڈپٹی چیف منسٹر کی مداخلت اور ناراضگی کے بعد امبیڈکر اوپن یونیورسٹی حکام آئندہ دو ہفتوں میں اردو میڈیم طلبہ کو نصابی کتب فراہم کرنے کا تیقن دیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر کو بتایا گیا کہ مولانا آزاد نیشنل یونیورسٹی کو ترجمہ کا کام حوالے کیا گیا ہے اور 60 فیصد کام کی تکمیل ہوچکی ہے۔ دوسری طرف نصابی کتب کی پرنٹنگ کا کام شروع ہوچکا ہے اور آئندہ دو ہفتوں میں نصابی کتب طلبہ تک پہنچنا شروع ہوجائیں گے۔ حکام نے تیقن دیا کہ اندرون دو ماہ تمام نصابی کتب طلبہ کیلئے دستیاب رہیںگی۔ مختلف اردو تنظیموں نے اس مسئلہ پر ڈپٹی چیف منسٹر سے نمائندگی کی تھی۔ اوپن یونیورسٹی کی جانب سے جاریہ تعلیمی سال اردو میڈیم گریجویشن کورس بند کرنے کے فیصلہ کو روزنامہ سیاست نے بے نقاب کیا تھا جس پر کافی ہنگامہ ہوا اور یونیورسٹی کو اردو میڈیم گریجویشن کورس کی برقراری کا اعلان کرنا پڑا۔ اردو میں نصابی کتب کی تیاری میں تاخیر کے سبب جاریہ سال گریجویشن کے طلبہ کیلئے کوئی کلاسس منعقد نہیں ہوئی اور نہ ہی وہ امتحانات کی تیاری کرسکے۔ آئندہ ماہ گریجویشن کے امتحانات ہیں اور اگر دو ہفتوں میں نصابی کتب دستیاب ہوں ، تب بھی انہیں تیاری کیلئے وقت لگے گا۔ طلبہ کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی کو امتحانات کے شیڈول میں تبدیلی کرتے ہوئے طلبہ کو نصاب کی تیاری کا موقع فراہم کرنا چاہئے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے وائس چانسلر پر واضح کردیا کہ حکومت کسی بھی یونیورسٹی میں اردو میڈیم ذریعہ تعلیم کو فروغ دینے کے حق میں ہے اور یونیورسٹی کو اردو کے بارے میں کوئی منفی فیصلہ سے گریز کرنا چاہئے ۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ یونیورسٹی اندرون دو ہفتہ اردو نصابی کتب کی پرنٹنگ کا کام مکمل کرلے گی۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے بتایا کہ تلنگانہ میں 66 اردو آفیسرس کے تقررات کے سلسلہ میں اعلامیہ اندرون 15 یوم جاری کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ تقررات کے سلسلہ میں جواہر لال نہرو ٹکنالوجیکل یونیورسٹی سے اردو اکیڈیمی میں یادداشت مفاہمت کی ہے اور امتحانات کا انعقاد یونیورسٹی کی نگرانی میں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے اردو اکیڈیمی کو تقررات کے سلسلہ میں نوڈل ایجنسی مقرر کیا ہے اور امتحانات کیلئے نصاب اور ماڈل پیپر تیار کرلیا گیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر کے مطابق 6 گریڈ I اور 60 گریڈ II عہدیداروں کے تقررات کے لئے تمام شرائط کو قطعیت دیدی گئی ہے۔ چیف منسٹر نے اردو زبان کے سرکاری محکمہ جات میں استعمال کو یقینی بنانے کیلئے عہدیداروں کے تقرر کا وعدہ کیا تھا۔ وعدہ کی تکمیل بہرصورت کی جائے گی۔ چیف منسٹر کے دفتر اور تمام ضلع کلکٹریٹس میں اردو عہدیدار مقرر کئے جائیں گے ، جو اردو میں آنے والی درخواستوں کا انگریزی یا تلگو میں ترجمہ کرتے ہوئے حکام کو پیش کریں گے۔ عہدیداروں کے تقرر سے اردو داں طبقہ کے مسائل بآسانی حکومت تک پہنچ سکتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT