Friday , November 24 2017
Home / سیاسیات / امتناعات کا دور گذر چکا : ارون جیٹلی

امتناعات کا دور گذر چکا : ارون جیٹلی

نئی دہلی ۔ 26 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) حکومت کو آزادی اظہارخیال کو کچلنے کی کوشش نہیں کرنی چاہئے۔ مرکزی وزیرفینانس، اطلاعات و نشریات ارون جیٹلی نے آج کہا کہ دستور وسیع تر مفادات کے سلسلہ میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ وہ آل انڈیا ریڈیو کے زیراہتمام سردار پٹیل لیکچر دے رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ حق آزادی اظہار کی توسیع ہندوستان نے ایک کے بعد ایک عدالتی فیصلوں اور ٹیکنالوجی کی ترقی کے ذریعہ ہوچکی ہے۔ اس کا اقل ترین غلط استعمال بھی کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کئی لوگوں کو یقین ہے اور وہ بھی ان میں سے ایک ہیں کہ اب امتناعات کا دور گذر چکا ہے۔ عملی اعتبار سے اب تحدیدات عائد کرنا بہت مشکل ہے۔ ارون جیٹلی نے مملکت کے امتناع عائد کرنے میں ملوث ہونے کے امکان کو مسترد کردیا اور کہا کہ ممکنہ حد تک مملکت اس میں ملوث نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ اخبارات اور بڑی حد تک برقی ذرائع ابلاغ اپنے مواد میں جانبدار اختیار کرتے ہیں۔ سماجی ذرائع ابلاغ میں ایسا کوئی نظام موجود ہی نہیں ہے۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ دستورسازوں نے بالکل درست طور پر آزادی تقریر و اظہار کو مطلق قرار نہیں دیا تھا اور واجبی تحدیدات کی گنجائش رکھی تھی جن کی وضاحت ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک ایسے معاشرہ میں جو کثیر مذہبی اور کثیر ثقافتی ہے کئی حساس گوشے پائے جاتے ہیں۔ ہم جو کچھ کرتے ہیں بعض اوقات وہ نادانستہ طور پر لکشمن ریکھا پار کرتا ہے۔ ہندوستانی سماج نے دانش کارٹونسٹ کے ساتھ کیا کیا ہوتا اگر وہ ہندوستانی کارٹونسٹ نہ ہوتا۔ چنانچہ ہمارے فوجداری قوانین میں ایسی دفعات موجود ہیں جو انتہائی نوعیت کے مقدمات میں استعمال کی جاتی ہیں۔ بعض اختیارات وسیع تر مفاد کے پیش نظر عطا کئے جاتے ہیں۔ چنانچہ ان سے عوامی نظام میں خلل اندازی پیدا نہیں ہوتی۔ یہی وجہ ہیکہ جب 1950ء کی دہائی میں دفعہ 19(2) کے تحت تحدیدات عائد کی گئیں تو اس نے اپنا بہت اہم کردار ادا کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT