امجد اللہ خالد پر راجہ سنگھ کے حامیوںکی حملہ کی کوشش

لکڑی کا پل علاقہ میں ہلکی کشیدگی ۔ مشتبہ شخص گرفتار کرلیا گیا
حیدرآباد ۔ /9 ڈسمبر (سیاست نیوز) لکڑی کا پل علاقہ میں آج اُس وقت ہلکی سی کشیدگی پیدا ہوگئی جب مجلس بچاؤ تحریک کے ترجمان مسٹر امجد اللہ خان خالد پر راجہ سنگھ کے حامیوں نے مبینہ طور پر حملہ کرنے کی کوشش کی ۔ بتایا جاتا ہے کہ ایم بی ٹی قائد آج رات لکڑی کا پل پشاور ہوٹل کے روبرو گزررہے تھے کہ اچانک دو گاڑیوں میں سوار اشرار نے ان کا تعاقب کیا اور انہیں جبراً روکا ۔ مسٹر خالد کی جانب سے گاڑی روکنے پر اشرار نے نعرے بازی شروع کردی اور انہیں زدوکوب کرنے کی کوشش کررہے تھے کہ خالد نے ایک شخص کو پکڑ لیا ۔ اس واقعہ کے بعد علاقہ میں ہلکی سی کشیدگی پیدا ہوگئی اور ایم بی ٹی لیڈر پر حملہ کی کوشش کی اطلاع کے بعد مقامی عوام جمع ہوگئی ۔ اسی دوران سیف آباد پولیس کی ایک ٹیم وہاں پہونچ کر مشتبہ شخص کو حراست میں لیا اور بتایا جاتا ہے کہ حملہ کی کوشش کرنے والے افراد حالت نشہ میں تھے اور بار بار راجہ سنگھ کو فون کررہے تھے ۔ بعد ازاں خالد نے سیف آباد پولیس اسٹیشن پہونچ کر ایک شکایت درج کروائی جس پر پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے مشتبہ شخص کو دواخانہ عثمانیہ بھیجا ۔ انسپکٹر سیف آباد مسٹر سیدی ریڈی نے بتایا کہ ایم بی ٹی لیڈر کی شکایت حاصل کرلی گئی ہے اور اس سلسلے میں تحقیقات کی جائے گی اور ذمہ دار افراد کے خلاف مناسب کارروائی کی جائے گی ۔ صدر مجلس بچاؤ تحریک جناب مجید اللہ خاں فرحت بھی سیف آباد پولیس اسٹیشن پہونچ کر تفصیلات سے واقفیت حاصل کی اور انہوں نے پولیس سے راجہ سنگھ کے حامیوں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ۔

TOPPOPULARRECENT