Monday , August 20 2018
Home / شہر کی خبریں / امراوتی میں آندھرا پردیش کی خوبصورت اسمبلی عمارت کا ڈیزائن

امراوتی میں آندھرا پردیش کی خوبصورت اسمبلی عمارت کا ڈیزائن

نارمن فورسٹر گروپ کے ساتھ مشاورت
حیدرآباد ۔ 11 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : حکومت آندھرا پردیش نے اپنی راجدھانی امراوتی میں ایک انمول و مثالی و خوبصورت انداز میں آندھرا پردیش قانون ساز اسمبلی کی نئی عمارت تعمیر کرنے کے لیے ڈیزائنس کو قطعیت دے دیا ہے اور توقع ہے کہ چیف منسٹر ین چندرا بابو نائیڈو آئندہ دو تین یوم میں قطعی ڈیزائنس کے لیے گرین سگنل دیں گے ۔ ذرائع نے یہ بات بتائی اور کہا کہ چند نئے ڈیزائنس لے کر نارمن فوسٹر امراوتی پہونچنے والے ہیں جب کہ 25 اکٹوبر کو ماسٹر آرکیٹکٹ نارمن فوسٹر اسمبلی کی نئی عمارت تعمیر کرنے کے سلسلہ میں دو ڈیزائنس پیش کرچکے ہیں ۔ لیکن چیف منسٹر نے ان ڈیزائنس میں چند تبدیلیاں کرنے کا مشورہ دیا تھا ۔ اس سلسلہ میں چیف منسٹر نے نارمن فوسٹر گروپ کے ساتھ ڈیزائنس پر غور و خوص کرنے والے ڈائرکٹر و پروڈیوسر مسٹر ایس ایس راج مولی و دیگر کے ساتھ ایک اجلاس طلب کیا ۔ اس اہم اجلاس میں وزیر اے پی سی آر ڈی اے و نائب صدر نشین مسٹر پی نارائنا ، سی آر ڈی اے کمشنر ڈاکٹر سی سریدھر ، آرکیٹکٹ چندر شیکھر و دیگر شریک تھے ۔ بتایا جاتا ہے کہ چندرا بابو نائیڈو یہ چاہتے ہیں کہ اسمبلی کی عمارت امراوتی اور آندھرا پردیش کے لیے ہی نہیں بلکہ ملک بھر میں ہی ایک خوبصورت و انمول طرز کی ہو اور ساتھ ہی ساتھ آندھرائی تہذیب و روایات کے علاوہ تمام تلگو والوں و آئندہ کی نسل در نسل کے لیے فخریہ انداز کی بھی ہونی چاہئے ۔ علاوہ ازیں اسمبلی عمارت کے اطراف و اکناف میں ایک خوشنما جھیل اور درمیان میں اسمبلی کی خوبصورت عمارت ہر ایک کے لیے دلکش ہو اور دن میں سورج کی شعاعوں سے اور رات کی چاندنی میں خوبصورت عمارت پانی میں چمکتی ہوئی دکھائی دینے کا مشورہ دیا ۔ اس اجلاس میں گذشتہ ایک عرصہ سے اسمبلی عمارت کے ڈیزائنس کو قطعی شکل دینے کے لیے کی جانے والی کوششوں کے ذریعہ حاصل ہونے والے نتیجہ سے مسٹر راج مولی نے چیف منسٹر کو واقف کروایا ۔ اور اس طرح آئندہ دو تین یوم میں اعلیٰ عہدیداروں ، عوامی نمائندوں اور ممتاز ماہرین کے ساتھ اجلاس طلب کر کے ڈیزائنس کا تفصیلی جائزہ لیا جائے گا اور پھر مسٹر چندرا بابو نائیڈو بہتر ڈیزائن پر مشتمل پلان کو قطعیت دیں گے ۔ اس کے علاوہ عوامی رائے حاصل کرنے کے لیے ان پلانس کو پبلک ڈومائین میں رکھے جانے کا بھی قوی امکان پایا جاتا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT