Friday , November 16 2018
Home / شہر کی خبریں / امراوتی میں اراضی اسکام ‘ چیف منسٹر نے رپورٹ طلب کی

امراوتی میں اراضی اسکام ‘ چیف منسٹر نے رپورٹ طلب کی

امراوتی 6 فبروری ( پی ٹی آئی ) آندھرا پردیش دارالحکومت علاقہ ڈیولپمنٹ اتھاریٹی کو ایک اراضی اسکام کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ تفصیلات کے بموجب ایک شخص کے نام پر 1,450 مربع گز کے قابل واپسی پلاٹس رجسٹرڈ کئے گئے ۔ یہ پلاٹس ایک ایکڑ اراضی کے عوض میں رجسٹر کئے گئے جو دعوی کیا گیا تھا کہ اس شخص نے ریاستی دارالحکومت کی تعمیر کیلئے دئے تھے ‘ جبکہ حقیقت یہ ہے کہ جس ایک ایکڑ اراضی کی حوالگی کا دعوی کیا گیا ہے وہ اراضی موجود ہی نہیں ہے ۔ ایک عہدیدار نے یہ بات بتائی ۔ عہدیدار کے بموجب چیف منسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے اس مبینہ لینڈ اسکام کا سخت نوٹ لیا ہے اور متعلقہ اتھاریٹی کو ہدایت دی ہے کہ اندرون تین دن انہیں رپورٹ پیش کی جائے ۔ عہدیدار نے کہا کہ جس شخص نے دارالحکومت کی تعمیر کیلئے اراضی حوالگی کا دعوی کیا ہے وہ اراضی موجود ہی نہیں ہے ۔ اس شخص کو اس کے بدلے میں 500 گز کے دو رہائشی پلاٹس اور 450 گز کا ایک کمرشیل پلاٹ رجسٹر کردیا گیا ۔ ان پلاٹس کی جملہ مالیت 4.5 کروڑ روپئے بتائی گئی ہے ۔ عہدیدار نے بتایا کہ چیف منسٹر نے دارالحکومت علاقہ ترقیاتی اتھاریٹی کے حکام کو ہدایت دی ہے کہ اندرون تین دن انہیں رپورٹ پیش کی جائے اور جو لوگ خاطی قرار پائیں ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے ۔ اتھاریٹی کے کمشنر سی ایچ سریدھر نے بتایا کہ اس سلسلہ میں پولیس شکایت درج کروادی گئی ہے اور خاطیوں کے خلاف فوجداری کارروائی کی جائے گی ۔ واضح رہے کہ امراوتی میں دارالحکومت کی تعمیر کیلئے کئی گوشوں سے اراضی حاصل کی گئی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT