Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / امراوتی میں لندن کے طرز پر ٹرانسپورٹ سسٹم

امراوتی میں لندن کے طرز پر ٹرانسپورٹ سسٹم

متعارف کرنے کی تجویز
چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو لندن دورہ سے واپس ، عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس
حیدرآباد ۔ 27 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو نے لندن کے طرز پر امراوتی میں ٹرانسپورٹ سسٹم متعارف کرانے کا جائزہ لیا ہے ۔ 9 روزہ بیرونی ممالک کا دورہ مکمل کر کے آج چندرا بابو نائیڈو امراوتی پہونچے ۔ انہوں نے مختلف محکمہ جات کے اعلیٰ عہدیداروں سے ریاست کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا ۔ آندھرا پردیش کے دارالحکومت امراوتی میں لندن کے طرز پر ٹرانسپورٹ نظام تیار کرنے کا جائزہ لیا ہے ۔ لندن میں چندرا بابو نائیڈو نے اپنے وفد کے ساتھ وہاں ٹرانسپورٹ نظام کا جائزہ لیا اور سنٹرل کمانڈ سنٹر کا دورہ بھی کیا ۔ وہاں کی ٹریفک ، ٹرانسپورٹ نظام کو کنٹرول کرنے والے چیف ٹکنالوجی آفیسر شیوورما نے چندرا بابو نائیڈو کے وفد کو پاور پوائنٹ پریزنٹیشن پیش کیا ۔ سنٹرل لندن میں انڈر گراونڈ ریل کے ذریعہ 4 فیصد عوام سفر کرتے ہیں ماباقی عوام دوسرے ٹرانسپورٹ سسٹم سے استفادہ کرتے ہیں ۔ بس ، انڈر گراونڈ ، ٹرانسپورٹ ، میٹرو ریل کے علاوہ دوسری ٹرانسپورٹ سہولتوں کا بھی جائزہ لیا گیا ۔ لندن کی جملہ آبادی 86 لاکھ ہے ۔ سنٹرل لندن میں 13 لاکھ ملازمین ہیں جس میں 12 لاکھ افراد سفر کرتے ہیں اور ایک لاکھ عوام وہاں قیام پذیر ہیں ۔ امراوتی کو بھی مستقبل میں اسی طرز پر ترقی دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ لندن میں 30 لاکھ سی سی ٹی وی کیمروں سے نظر رکھی جارہی ہے ۔ ہر حرکت کیمروں میں قید ہوتی ہے ۔ ہر چار کیلو میٹر پر ایک اس طرح 19,500 بس اسٹاپس ہیں ۔ ٹرانسپورٹ فار لندن کا 2003 میں قیام عمل میں لایا گیا ۔ اس ٹرانسپورٹ سے 1.4 بلین پونڈ کی آمدنی ہوتی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT