Monday , November 20 2017
Home / شہر کی خبریں / امراوتی میں وزیر اعظم کی تقریر سے مایوسی

امراوتی میں وزیر اعظم کی تقریر سے مایوسی

آندھرا پردیش ریاست کیلئے کسی قسم کا کوئی اعلان نہیں : جئے دیو تلگو دیشم ایم پی کا ردعمل
حیدرآباد ۔ 23 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز): تلگو دیشم کے رکن پارلیمنٹ مسٹر جئے دیو نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی تقریر سے انہیں بھی مایوسی ہوئی ہے ۔ تلگو دیشم منشور کے مطابق ہر گھر کو ایک ملازمت فراہم کرنا ممکن نہیں ہے ۔ مسٹر جئے دیو نے کہا کہ آندھرا پردیش کے 5 کروڑ عوام کے ساتھ وہ بھی وزیر اعظم نریندر مودی سے کئی امیدیں وابستہ کیے تھے کہ امراوتی سنگ بنیاد تقریب میں شرکت کرنے والے وزیر اعظم آندھرا پردیش کے لیے کچھ اعلان کریں گے ۔ لیکن انہوں نے کوئی اعلان نہ کرتے ہوئے آندھرا پردیش کے عوام کو مایوس کیا ہے ۔ وزیر اعظم کی تقریر سے وہ بھی مایوس ہوئے ہیں انہوں نے کہا کہ تلگو دیشم این ڈی اے کے حلیف جماعت ہے باوجود اس کے وزیر اعظم نے آندھرا پردیش کے لیے کوئی اعلان نہیں کیا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ بہت کچھ بولنا چاہتے ہیں مگر حلیف جماعت کی وجہ سے احترام کررہے ہیں ۔ آندھرا پردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ حاصل کرنے کے لیے بہت جلد چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو کے زیر قیادت ایک وفد وزیر اعظم سے ملاقات کرے گا ۔ تلگو دیشم کے رکن پارلیمنٹ نے کہا کہ ان کی کاوشوں سے ہی تنالی میں سنٹرل یونیورسٹی قائم ہورہی ہے مگر چند افراد اس کو اپنا کارنامہ قرار دیتے ہوئے سستی شہرت حاصل کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔ سنگ بنیاد تختی پر چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کا نام تحریر کرنے پر پیدا شدہ تنازعہ پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہیں سنگ بنیاد تختی پر کے سی آر کا نام ہونے پر کوئی اعتراض نہیں ہے تاہم تختی پر مقامی رکن پارلیمنٹ رکن اسمبلی اور سرپنچ کا نام نہ ہونے پر اعتراض ہے ۔ مسٹر جئے دیو نے کہا کہ ان کا گنٹور سے زیادہ دہلی میں رہنا بہتر ہے ۔ اگر کسی کو کوئی کام ہے تو وہ انہیں ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ ربط پیدا کرسکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ انتخابی مہم کے دوران تلگو دیشم پارٹی کی جانب سے ہر گھر کو ایک ملازمت فراہم کرنے کا جو وعدہ کیا گیا ہے اس پر عمل آوری ممکن نہیں ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT