Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / امریکہ اور ساری دُنیا کے مسلمانوں کی تائید کرنے گوگل سربراہ کا عہد

امریکہ اور ساری دُنیا کے مسلمانوں کی تائید کرنے گوگل سربراہ کا عہد

رواداری اور کشادہ ذہن امریکہ کی عظیم طاقت ، ڈونالڈ ٹرمپ کے ریمارکس پر سندر پچائی کا ردعمل
نیویارک۔ 12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) فیس بُک کے چیف ایگزیکٹیو مارک زوکر برگ کے بعد گوگل کے ہند نژاد امریکی سربراہ سندر پچھائی کا بھی مسلمانوں کی تائید کے لئے آگے آئے ہیں۔ پچائی نے کہا کہ کسی بھی کمپنی کی تعمیر یا کسی ملک کی رہنمائی کے لئے مختلف آوازوں کے کثیر مجموعہ کی ضرورت ہوتی ہے۔امریکہ میں مسلمانوں کے داخلہ پر امتناع عائد کرنے ری پبلیکن پارٹی کے متوقع صدارتی امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ کے تبصروں پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے سندر پچائی نے سوشیل میڈیا پر جاری کردہ اپنے پیام میں لکھ کر ’’خبروں میں پیش کردہ عدم رواداری ریمارکس دیکھ کر سخت تکلیف پہونچی ہے‘‘۔

سندر پچائی نے کہا کہ ’’مَیں خود اپنے آپ میں یہ سوچتا رہا کہ یہ پیام جاری کیا جائے؟ کیونکہ اکثر یہ دیکھا گیا ہے کہ عدم رواداری کی مذمت سے بھی اس (عدم رواداری) کی بحث کو تقویت پہونچتی ہے لیکن مَیں نے محسوس کیا کہ بہرحال ہمیں اس کے خلاف کچھ کہنا چاہئے بالخصوص انہیں جو (عدم رواداری کے) اس مخصوص حملے کا نشانہ نہیں ہیں‘‘۔ پچائی نے کہا کہ ہر کسی کو اپنے نظریات کے اظہار کا حق حاصل ہے لیکن یہ بھی اہم ہے کہ جن نظریات کی کم نمائندگی و ترجمانی ہوتی ہے، انہیں یہ جان لینا چاہئے کہ ایسے نظریات سب کی ترجمانی نہیں کرتے۔ سندر پچائی نے کہا کہ ’’اپنے خوف و اندیشوں کو اپنے قدار پر غالب آنے نہ دیجئے۔ ہمیں امریکہ اور ساری دنیا میں مسلمانوں اور دیگر اقلیتوں کی تائید و حمایت کرنا چاہئے‘‘۔ ٹرمپ نے اس ہفتہ یہ کہتے ہوئے بین الاقوامی سطح پر غم و غصہ کی لہر دوڑا دی تھی کہ ’’امریکہ میں مسلمانوں کے داخلہ پر مکمل امتناع عائد کیا جانا چاہئے‘‘ جس کے جواب میں فیس بُک کے سی ای او مارک زوکربرگ نے ساری دنیا میں مسلمانوں کی تائید و حمایت کا عہد کیا تھا اور کہا تھا کہ سوشیل نیٹ ورکنگ سائیٹ (فیس بُک) ان (مسلمانوں) کے حقوق کے تحفظ اور ان کے لئے ایک پرامن و محفوظ فضاء ہموار کرنے کیلئے جدوجہد کرے گی۔ سندر پچائی نے 22 سال قبل ہندوستان سے امریکہ کو اپنی منتقلی کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ یہاں انہوں نے دیکھا ہے کہ مواقع کی سرزمین امریکہ میں سخت محنت و جانفشانی نے ان کے لئے کس طرح (ترقی و خوشحالی کے) کئی دروازے کھولے ہیں۔ پچائی نے مزید کہا کہ ’’اور مَیں خود کو اس ملک کا ایک حصہ محسوس کرتا ہوں، بالکل اس طرح جیسا میں ہندوستان میں پلا اور بڑا ہوا ہوں۔ میرا تجربہ بھی یقیناً منفرد و مختلف نہیں ہے۔ امریکہ نے ایسے موقعوں تک رسائی دلائی ہے جو ہم میں سے کئی افراد کو یہاں آنے سے قبل دستیاب نہیں تھے‘‘۔ سندر پچائی نے کہا کہ ’’کشادہ ذہن، رواداری اور نئے امریکیوں کو قبول کرنا اس ملک (امریکہ) کی عظیم طاقت اور ایک واضح تعریف و تشریح کردہ کردار بھی ہے۔ گوگل سربراہ نے کہا کہ ’’اور یہ محض اتفاق نہیں ہے کہ امریکہ دراصل ایمیگرینٹس کا ملک ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT