Wednesday , July 18 2018
Home / دنیا / امریکہ اور ہندوستان کی معاشی شراکت داری مستحکم : ایوانکا

امریکہ اور ہندوستان کی معاشی شراکت داری مستحکم : ایوانکا

واشنگٹن ۔ 27 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی دختر و مشیر ایوانکا ٹرمپ نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ گلوبل انٹر پرینرشپ سمٹ جو کل سے حیدرآباد میں شروع ہونے والی ہے، جس کی امریکہ اور ہندوستان مشترکہ طور پر میزبانی کررہے ہیں، کے ذریعہ یہ بات ثابت ہوجائے گی کہ ہندوستان اور امریکہ کے درمیان معاشی اور سیکوریٹی شراکت داری ہر گزرنے والے دن کے ساتھ مضبوط تر ہوتی جارہی ہے۔ ایوانکا ٹرمپ انتظامیہ کے سینئر عہدیدار اور تاجرین پر مشتمل ایک وفد کی قیادت کررہی ہیں۔ حیدرآباد میں 3 روزہ سمٹ کی تمام تیاریاں مکمل ہوچکی ہیں۔ سمٹ میں 127 ممالک سے تعلق رکھنے والے زائد از 1200 نوجوان اٹرپرینرس جن میں اکثریت خواتین کی ہے، اس سمٹ میں شرکت کررہے ہیں جس کا افتتاح وزیراعظم ہند نریندر مودی کے ہاتھوں عمل میں آئے گا۔ علاوہ ازیں 300 سرمایہ کار اور اکوسسٹم سپورٹرس (ماحولیاتی نظام دوست) بھی اس اعلیٰ سطحی ایونٹ میں شرکت کررہے ہیں جسے دنیا کی نوجوان انٹرپرینرس پر مشتمل وفد کی اب تک کی اعظم ترین کانفرنس سے تعبیر کیا جارہا ہے۔ ہندوستان کے دورہ کی تیاریوں کے موقع پر ایوانکا ٹرمپ نے اخباری نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ معاشی اور سیکوریٹی شعبہ میں ہند ۔ امریکہ تعلقات کو مزید استحکام حاصل ہونے والا ہے جس کے ہم بے چینی سے منتظر ہیں۔ 36 سالہ ایوانکا ٹرمپ یوں تو قبل ازیں بھی ہندوستان کا دورہ کرچکی ہیں لیکن صدارتی مشیر کی حیثیت سے یہ ان کا پہلا دورہ ہوگا۔ ٹرمپ انتظامیہ کے اعلیٰ سطحی عہدیداران اور ہندوستانی نژاد امریکی شہریوں کی کثیر تعداد جو وفد میں شامل ہیں اور صرف ان ہی لوگوں کی تعداد 350 بتائی گئی ہے جن کا تعلق 38 ریاستوں سے ہے۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بھی ضروری ہے جب جاریہ سال جون میں نریندر مودی نے امریکہ کا دورہ کیا تھا اس وقت انہوں نے ایوانکا کو شخصی طور پر جی ای ایس میں شرکت کی دعوت دی تھی جس کا ہندوستان میں پہلی بار انعقاد کیا جارہا ہے۔ اس سال منعقد کی جانے والی جی ای ایس کا تھیم ہے ’’وومین فرسٹ، پراسپیریٹی فارآل‘‘ (خواتین پہلے۔ سب کیلئے خوشحالی)۔ گذشتہ ہفتہ ہی ایوانکا نے اخباری نمائندوں سے بات کی تھی اور یہ تمام تفصیلات بتائی تھیں۔ انہوں نے کہا کہ سمٹ کی تھیم سے یہ اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ اس بات کا بیحد خواہاں ہے کہ خواتین کو بااختیار بنایا جائے چاہے ان کا تعلق کسی بھی ملک سے ہو کیونکہ جب خواتین معاشی طور پر خودکفیل اور بااختیار ہوں گی تو نہ صرف ان کی کمیونٹی بلکہ ان کے متعلقہ ممالک بھی خوشحالی کے منازل طئے کرتے جائیں گے۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بھی دلچسپ ہوگا کہ جی ای ایس میں شرکت کرنے والے انٹرپرینرس کی جملہ تعداد کا 5 فیصد 30 سال یا اس سے کم عمر پر مشتمل ہے جبکہ سب سے کم عمر انٹرپرینر کی عمر 13 سال بتائی گئی ہے اور سب سے معمر انٹرپرینر 84 سال کا ہے۔ ایوانکا نے یہ بھی کہا کہ اس سمٹ کے ذریعہ وہ ایک کھلے اور مشترکہ ماحول کو تیار کرنا چاہتی ہیں تاکہ مختلف نظریات اور اختراعات کا باہم تبادلہ کیا جاسکے جس کے ذریعہ نیٹ ورک کو بھی وسیع تر کرتے ہوئے انٹرپرینرس کو زائد بااختیار بنانا اور ان وسیع تر نیٹ ورک کے ذریعہ اپنے خیالات، نظریات اور اختراعات کو آئندہ بہترین سطح تک لے جانا ہی ہمارا مقصد ہے۔ ایوانکا نے کہا کہ وہ اپنے دورہ ہندوستان کا بے چینی سے انتظار کررہی ہیں اور ساتھ ہی ساتھ وزیراعظم نریندر مودی اور وزیرخارجہ سشماسوراج سے ایک بار پر ملاقات کی متمنی ہیں۔ دریں اثناء جی ای ایس ہندوستان میں متعینہ نئے امریکی سفیر کین جسٹر کیلئے بھی پہلا اعلیٰ سطحی ایونٹ ہے۔ گذشتہ ہفتہ انہوں نے ٹوئیٹ کرتے ہوئے کہا کہ سفیر کے طور پر تقرری کے فوری بعد پہلا ہفتہ ہی جوش و خروش سے بھرپور رہا۔ ہندوستان میں جس طرح ان کا والہانہ خیرمقدم کیا گیا اس کیلئے وہ شکرگذار ہیں۔ مجھے اس منفرد ملک میں رہتے ہوئے ابھی بہت کچھ دیکھنا ہے، معلوم کرنا ہے اور سیکھنا ہے اور گلوبل انٹرپرینر شپ سمٹ جیسے اعلیٰ سطحی ایونٹ کے ذریعہ حیدرآباد سے اپنے سفر کا آغاز کرنے پر بیحد مسرور ہوں۔

TOPPOPULARRECENT