Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / امریکہ سے حیدرآبادی طلباء کے اخراج پراحتجاج‘سشما سوراج کو مکتوب

امریکہ سے حیدرآبادی طلباء کے اخراج پراحتجاج‘سشما سوراج کو مکتوب

حیدرآباد۔/6جنوری، (سیاست نیوز) ریاستی وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے مرکزی وزیر خارجہ سشما سوراج کو مکتوب لکھتے ہوئے حیدرآبادی طلباء کے ساتھ حکومت امریکہ کے اختیار کردہ سخت رویہ پر احتجاج کیا ہے۔ انہو ں نے سشما سوراج پر زور دیا کہ وہ امریکی حکومت سے رجوع ہوکر ہندوستانی طلباء خاص کر حیدرآباد کے طلباء کو واپس بھیج دینے کے حالیہ واقعات سے واقف کرائیں اور اس مسئلہ کو جلد سے جلد حل کریں۔امریکی حکومت کئی طلباء اور ان کے ارکان خاندان کو مسائل سے دوچار کررہی ہے۔ اس سلسلہ میں مرکزی وزیر خارجہ کو متعلقہ امریکی عہدیداروں سے بات چیت کرنی چاہیئے اور طلباء کے اخراج کا عمل فوری روک دینا چاہیئے۔ مرکزی وزارت امور خارجہ کو روانہ کردہ مکتوب میںوزیر انفارمیشن ٹکنالوجی نے کہا کہ گزشتہ دو ماہ کے دوران تلنگانہ ریاست سے تعلق رکھنے والے کئی طلباء کو ان کے وطن واپس بھیج دیا گیا جبکہ ان طلباء کے پاس امریکی قونصل خانہ کی جانب سے جاری کردہ کارآمد ویزے تھے۔ روایتی طور پر حیدرآباد شہر سے امریکہ میں تعلیم حاصل کرنے کیلئے طلباء کی زیادہ تعداد روانہ ہوتی رہی ہے اور امریکہ میں ماہرانہ کام انجام دینے والے ورک فورس میں بھی ریاست تلنگانہ کے طلباء کا اہم رول رہا ہے۔ انہوں نے یہ بھی نشاندہی کی کہ جن طلباء کو امریکہ سے واپس بھیج دیا جارہا ہے ان میں سے کئی طلباء نے امریکی یونیورسٹیز میں اپنی تعلیم کے حصول کیلئے قرضے حاصل کئے ہیں اب ایسے طلباء کو تعلیم کے بغیر ہی ہندوستان واپس بھیج دیا گیا تو ان پر مالی اور دیگر پریشانیوں کا برا اثر پڑے گا۔ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ امریکی حکام اپنے اقدامات کے ذریعہ غیر واضح موقف اختیار کئے ہوئے ہیں ان بے بس طلباء کو وطن واپس کرنے کیلئے جو سخت ترین رویہ اختیار کیا گیا ہے وہ تکلیف دہ ہے۔ میڈیا رپورٹس میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ جو طلباء وہاں پر پہلے ہی سے تعلیم حاصل کرتے ہوئے جزوی کام کررہے ہیں انہیں بھی امریکی حکام خارج کررہے ہیں۔ انہوں نے مرکزی وزیر خارجہ سے خواہش کی کہ وہ امریکی حکومت کے سربراہوں سے بات چیت کرتے ہوئے مذکورہ واقعات سے واقف کرائیں۔

TOPPOPULARRECENT