Saturday , December 15 2018

امریکہ عراق کے وفاقی نظام حکومت کا حامی: جوبیڈن

واشنگٹن۔ 24؍اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام)۔ نائب صدر امریکہ جوبیڈن نے عراق میں دہشت گردی کے خطرات کے ساتھ ساتھ بڑھتی ہوئی داخلی تقسیم کے پیش نظر متحد ہونے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ عراق میں وفاقی نظام حکومت کی تائید کرے گا۔ روزنامہ ’واشنگٹن پوسٹ‘ کے ایک کالم میں جوبیڈن نے لکھا ہے کہ امریکہ، عراق میں دولت اسلامی داعش کے خلاف عہدی

واشنگٹن۔ 24؍اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام)۔ نائب صدر امریکہ جوبیڈن نے عراق میں دہشت گردی کے خطرات کے ساتھ ساتھ بڑھتی ہوئی داخلی تقسیم کے پیش نظر متحد ہونے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ عراق میں وفاقی نظام حکومت کی تائید کرے گا۔ روزنامہ ’واشنگٹن پوسٹ‘ کے ایک کالم میں جوبیڈن نے لکھا ہے کہ امریکہ، عراق میں دولت اسلامی داعش کے خلاف عہدیداروں کی حمایت میں اضافہ کرنے کے لئے تیار ہے اور اپنے بین الاقوامی اتحادیوں پر زور دے گا کہ وہ بھی ایسا ہی کریں۔ بیڈن نے خبردار کیا کہ گہری فرقہ واریت تقسیم اور سیاسی بد اعتمادی نے عراقی فوج کی طاقت کو کھوکھلا اور داعش جیسے جنگجوؤں کو طاقت میں اضافہ کردیا ہے۔ انھوں نے بتایا کہ ایک کارآمد وفاقی حکومت عراق میں تقسیم کا خاتمہ کرسکتی ہے۔ بیڈن امریکہ کی جانب سے عراق کو تین نیم خود مختار علاقوں میں تقسیم کرنے کے پرانے حامی ہیں۔ اس منصوبہ کے تحت عراق کو شیعہ، سنی اور کرد نیم خودمختار علاقوں میں تقسیم کر دیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا امریکہ اس نمونہ کی کامیابی کے لئے دفاعی چوکھٹا معاہدے کے تحت تربیت اور دوسرے شعبوں میں مدد فراہم کرنے تیار ہے۔ بیڈن نے مطالبہ کیا کہ عراق کے تمام فریق اپنے موقف میں حقیقی طور پر سمجھوتہ کریں۔ بیڈن نے ایک طویل المیعاد چیلنج کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہ جنگ عراق، امریکہ اور دنیا کی مدد سے ہر صورت جیتے گا۔ انھوں نے اعتراف کیا کہ یہ خطرہ عراق تک محدود نہیں ہے۔ ان کا مطالبہ تھا کہ خطے کی طاقتوں اور شامی حزب اختلاف داعش کے مقابلہ کے لئے مسلسل حمایت کریں۔

TOPPOPULARRECENT