Wednesday , December 13 2017
Home / دنیا / امریکہ میں برٹش ایرویز کا طیارہ شعلہ پوش ، 172 افراد بال بال بچ گئے

امریکہ میں برٹش ایرویز کا طیارہ شعلہ پوش ، 172 افراد بال بال بچ گئے

مسافروں کے علاوہ ارکان عملہ محفوظ ، اندرون 3 منٹ آگ بجھا دی گئی ، تحقیقات جاری

ہوسٹن۔ 9 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) تمام 172 افراد جو برٹش ایرویز کے ایک طیارہ میں سوار تھے ، کرشماتی طور پر آج بال بال بچ گئے جبکہ طیارہ کا ایک انجن دھماکہ سے پھٹ پڑا اور شعلہ پوش ہوگیا ۔ یہ واقعہ طیارہ کی پرواز سے عین قبل لاس ویگاس کے رن وے پر پیش آیا۔ یہ پرواز لاس ویگاس سے لندن جانے والی تھی۔ 257 نشستی بوئنگ 777 دھماکے سے شعلہ پوش ہوگیا۔ لاس ویگاس میں میک کارن انٹرنیشنل ایرپورٹ کے رن وے پر یہ حادثہ پیش آیا۔ ہندوستانی معیاری وقت کے مطابق اس وقت 4:30 بجے شب کا وقت تھا۔ جبکہ یہ طیارہ لندن روانہ ہونے کیلئے تیار تھا۔ اس میں 159 مسافر اور 13 ارکان عملہ سوار تھے۔ ایرپورٹ عہدیداروں کے بموجب زبردست سیاہ کثیف دھواں اور نارنجی رنگ کے شعلے طیارہ کے پروں کے نیچے سے ابھرے تھے جس کی وجہ سے مسافر طیارہ سے تیزی سے اُتر گئے اور پورے ٹارمک پر فرار ہونے کیلئے دوڑنے لگے۔ تقریباً 50 ارکان آتش فرو عملے کو طلب کیا گیا جنہوں نے منٹوں میں طیارہ کی آگ بجھا دی۔ سرکاری عہدیداروں کے بموجب 14 افراد پرواز نمبر 2276 پر سوار تھے جنہیں معمولی زخموں کے علاج کے لئے ہسپتال منتقل کیا گیا۔ ان میں سے بیشتر معمولی زخموں کے ساتھ بال بال بچ گئے۔

 

آتش فرو عملہ کے عہدیداروں نے کہا کہ نیم طبی عملہ جو موقع واردات پر موجود تھا، مسافروں کا جائزہ لے رہا ہے۔ آتش فرو عملے کے ارکان جو ایرپورٹ پر تعینات تھے، آگ بھڑک اٹھنے کے 2 منٹ کے اندر طیارے کے پاس پہنچ گئے اور تین منٹ کے اندر طیارہ میں موجود تمام افراد بچ گئے۔ آتش فرو عملہ نے شعلے بجھا دیئے۔ ہنگامی خدمات کی گاڑیاں طیاروں کو گھیری ہوئی نظر آرہی تھیں جس سے مٹیالے بھورے رنگ کا دھواں اور شعلوں کو بجھانے والے کیمیائی اشیاء کا دھواں اُٹھتا ہوا نظر آرہا تھا۔ وفاقی شہری ہوا بازی انتظامیہ کے ترجمان ایان گریگو نے کہا کہ طیارہ کا انجن شعلہ پوش ہوگیا تھا۔ تحقیقات جاری ہیں۔ قومی حمل و نقل حفاظتی بورڈ اس واقعہ کی تفصیلات جمع کررہا ہے۔ واشنگٹن نے محکمہ کے ترجمان ایرک ویس نے اس کا انکشاف کیا۔ برٹش ایرویز نے کہا کہ آگ تیکنیکی مسئلہ کی وجہ سے بھڑک اٹھی تھی۔ ایرپورٹ کے رن ویز میں سے ایک بند کردیا گیا، لیکن دیگر تین رن ویز پر کارروائی جاری رہی۔ لاس ویگاس امریکہ کا نواں مصروف ترین ایرپورٹ ہے اور گزشتہ سال تقریباً 4 کروڑ 30 لاکھ مسافرین نے اسے استعمال کیا تھا۔ ایرپورٹ اقدامات کررہا ہے تاکہ مزید بین الاقوامی مسافرین جو یوروپ اور ایشیا کو راست پروازیں کرنا چاہتے ہیں، انہیں اس کا موقع فراہم کیا جائے۔ وسیع پیمانے پر دو منزلہ جیٹ طیارے فراہم کئے جائیں گے اور نئی پھاٹکیں بھی نصب کی جائیں گی۔

TOPPOPULARRECENT