Monday , June 25 2018
Home / Top Stories / امریکہ میں ’طوفانی بم‘ سرد ہواؤں کیساتھ برفباری

امریکہ میں ’طوفانی بم‘ سرد ہواؤں کیساتھ برفباری

نیویارک، کیرولائینا اور دیگر کئی ریاستوں کے ایرپورٹس بند، اسکولوں کو تعطیل، عوام برقی سے محروم

نیویارک ۔ 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ہولناک ’طوفان بم‘ نے گوشت پوست سے گذرتی ہوئی ہڈیوں کو ٹھٹھرادینے والی سرد ہواؤں، بھاری برفباری اور ناقابل برداشت سردی کی لہر کے ساتھ امریکہ کے مشرقی ساحل کو برفانی چادر میں لیپ لیا جس کے ساتھ ہی سارے وسیع و عریض مشرقی ساحلی علاقے پر جمود طاری ہوگیا۔ جنوب مشرقی ریاستوں، جنوب و شمالی کیرولینا میں جہاں ساری سڑکیں برف پوش ہوگئی ہیں، چار افراد فوت ہوئے ہیں۔ قومی موسمیاتی خدمات نے آج دن میں کہا کہ امریکہ کے ایک تہائی مشرقی علاقہ میں اس ہفتہ کے اواخر تک درجہ حرارت میں غیرمعمولی کمی کے ساتھ بموں جسموں کو منجمد کرنے والی سرد ہواؤں کا سلسلہ جاری رہے گا۔ امریکہ کا ایک بڑا حصہ شدید سردی اور برفباری کی زد میں ہے اور بدترین سردی کی لہر سے تاحال درجن بھر افراد فوت ہوچکے ہیں۔ شمال مشرقی ریاستوں میں بھی برفباری اور جسموں کو ٹھٹھرا دینے والی سردی کے آغاز کے بعد ہزاروں طیاروں کی پروازیں منسوخ کردی گئیں اور سینکڑوں اسکولس بند کردیئے گئے۔ نیویارک کے کینڈی اور لاگارڈیا ایرپورٹس بند کئے جاچکے ہیں۔ شمالی نیویارک میں درجہ حرارت اس حد تک کمترین سطح پر پہنچ گیا تھا کہ امریکہ۔ کینیڈا سرحد پر واقع آبشار نیاگرا بھی منجمد ہوگئے۔ ورجینیا اور کیرولینا میں ہزاروں افراد برقی سے محروم ہوگئے۔ نیویارک اور بوسٹن میں بھی برقی سربراہی محرومی کے سبب تقریباً 50 ہزار صارفین کو دشواریوں کا سامنا کرنا پڑا۔ بالخصوص ساحلی بوسٹن میں ’’طوفانی بم‘‘ بڑی لہروں کے ساتھ پہنچا اور مساچوسٹس کے گورنر پارلی بیکر نے اس کو ’’تاریخی سیلاب‘‘ قرار دیا، جس کے نتیجہ میں بوسٹن کی مشرقی سڑکیں اور اس ریاست کے ساحلی علاقے زیرآب آگئے۔ شمالی فلوریڈا اور جنوب مشرقی جارجیا میں سڑکیں بند کردی گئی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT