Monday , October 22 2018
Home / Top Stories / امریکہ میں ’نونازی ازم ‘کی کوئی گنجائش نہیں: ایوانکاٹرمپ

امریکہ میں ’نونازی ازم ‘کی کوئی گنجائش نہیں: ایوانکاٹرمپ

واشنگٹن ۔ 12اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ کی دختر اور وائیٹ ہاؤز کی مشیر ایوانکا ٹرمپ نے واضح طور پر ’’ سفید فاموں کی برتری ‘ نسل پرستی اور نو نازی ازم ‘‘ کی اپنے والد کے برعکس واضح طور پر مذمت کی ۔ انہوں نے کہا کہ ایک سال قبل شارلٹس ویلے میں ہم نے ایک بھدا مظاہرہ نفرت انگیز نسل پرستی ‘ کثیرزواجگی اور تشدد ‘‘ کا دیکھا تھا ۔ انہوں نے کل رات اپنے ٹوئیٹر پر تحریر کرتے ہوئے شارلٹس ویلے ورجینیا میں سفید فاموں کی برتری کے مظاہرے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے مہلک بے چینی کی سالگرہ تقریب کے موقع پر کہا کہ اسی طرح کا انتہا پسند دائیں بازو کا ایک جلوس وائیٹ ہاؤز کے روبرو آج مقرر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ امریکی عوام کو ایک ایسی قوم کے طور پر جینے کا انعام ملا ہے جو آزادی ‘ آزادی تقریر اور اختلاف رائے کا تحفظ کرتی ہے ۔ اس لئے امریکہ میں سفید فاموں کی برتری ‘ نسل پرستی اور نونازی ازم کی کوئی گنجائش موجود نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ نفرت ‘ نسل پرستی اور تشدد کاخوف کرتے ہوئے ایک دوسرے کو نیچا دکھانے کی فکر سے دوسرے شخص کو بلند مقام ‘ طاقت اور ترسیل کا موقع حاصل ہوتا ہے ۔ جب کہ امریکی عوام کے طبقات ہر امریکی کے تحفظ کیلئے ممکنہ حد تک جدوجہد کررہے ہیں ۔ ان کے ٹوئیٹر اس لئے بھی قابل ذکر ہیں کیونکہ ان کے والد نے شارلٹس ویلے میں خونریزی کے بعد لوگوں کی تنقید کا سامنا کیا تھا ‘ جب کہ انہوں نے ابتدائی مرحلہ میں سفید فاموں کی برتری کے علمبرداروں کے جلوس میں شریک ہونے کی مذمت کرنے سے انکار کردیا تھا ۔ صدر ٹرمپ کی یہ کہتے ہوئے مذمت کی گئی تھی کہ وہ عوام کے ساتھ نہیں ہیں اور عوام کے تمام طبقات کو مساوی نہیں سمجھتے ۔ نسل پرستوں اور احتجاج کے دشمنوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں ۔ صدر ٹرمپ نے بعدازاں مذمتی بیان جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ عوام کی تائید میں ہیں اور امریکی عوام کے تمام طبقات کو برابر کا درجہ دیتے ہیں ۔ دو دن بعد تنقید کے ایک آتشی طوفان کے بعد صدر امریکہ نے کہا تھا کہ نسل پرستی ایک برائی ہے اور جو لوگ اس کیلئے تشدد کا راستہ اختیار کرتے ہیں وہ مجرموں اور ٹھگوں کی ٹولی سے تعلق رکھتے ہیں ۔ ان میں کے کے کے ‘ نونازی ‘ سفید فاموں کی برتی کے علمبردار اور دیگر نفرت انگیز گروپ شامل ہیں ۔ صدر امریکہ نے ہفتہ کے دن ایک عام مذمتی بیان نسل پرستی کے خلاف اور اس کی نوعیتوں کے خلاف اپنے ٹوئیٹر پر شائع کیا تھا اور کہا تھا کہ ایک سال قبل شارلٹس ویلے میں جو فسادات ہوئے ہیں اور عوام میں انتشار پیداہوا ہے اسکی وہ سختی سے مذمت کرتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT