Sunday , December 17 2017
Home / ہندوستان / امریکہ میں ہندوستانیوں کیخلاف نسلی حملے تشویشناک

امریکہ میں ہندوستانیوں کیخلاف نسلی حملے تشویشناک

مسئلہ پر لوک سبھا میں اپوزیشن کی بحث وزیراعظم نریندر مودی کی ’’خاموشی‘‘ پر تنقید

نئی دہلی ۔ 9 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) لوک سبھا میں ارکان نے امریکہ میں ہندوستانیوں کے خلاف نفرت پر مبنی جرائم اور نسلی حملے پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کیا۔ اپوزیشن پارٹیوں نے اس معاملہ پر وزیراعظم نریندر مودی کی ’’خاموشی‘‘ پر سوال اٹھایا اور کہا کہ یہ مسئلہ نہایت ہی سنگین ہوتا جارہا ہے۔ اپوزیشن ارکان نے حکومت پر زور دیاکہ وہ پارلیمنٹ میں بیان دیکر آیا وہ اس مسئلہ سے نمٹنے کیلئے کیا منصوبہ بنارہی ہے۔ اپوزیشن کے اس سوال کے ساتھ ہی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے کہا کہ ان واقعات کا سنجیدگی سے نوٹ لیا گیا ہے۔ انہوں نے ایوان کو تیقن دیا کہ بیرون ہند مقیم ہندوستانیوں کے اندر تحفظ کا احساس پیاد کرنے کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔ راجناتھ سنگھ نے یہ بھی کہا کہ آئندہ ہفتہ حکومت اس مسئلہ پر پارلیمنٹ میں بیان دے گی۔ حالیہ ہفتوں میں امریکہ کے اندر نفرت پر مبنی جرائم کے مشتبہ کیسوں میں کم از کم دو ہندوستانی ہلاک ہوئے ہیں۔ اس مسئلہ کو اٹھانے کیلئے کئی اپوزیشن ارکان کی جانب سے دی گئی تحریک نوٹسوں کو نامنظور کرتے ہوئے اسپیکر لوک سبھا سمترا مہاجن نے کہاکہ اپوزیشن کی نوٹس پر کوئی غور نہیں کیا جائے گا۔ اس کے بعد اپوزیشن نے وقفہ صفر کے دوران اس معاملہ کو اٹھایا۔ کانگریس لیڈر ملکارجن کھرگے نے حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ امریکہ کے ساتھ اس مسئلہ کو اٹھانے میں ’’ناکام‘‘ ہوئی ہے۔ امریکہ میں مقیم ہندوستانیوں پر کئے گئے جان لیوا حملہ اور نسلی تشدد کے سلسلہ وار واقعات نہایت ہی صدمہ خیز ہیں۔ وزیراعظم مودی اور ان کی حکومت نے امریکہ کے سامنے اس مسئلہ کو نہیں اٹھایا اور وہ امریکہ پر دباؤ ڈالنے میں ناکام رہی ہے۔ حکومت نے نہ تو ان واقعات کی مذمت کی ہے اور نہ ہی امریکہ کے ساتھ اعلیٰ سطح پر اس مسئلہ کو اٹھایا ہے۔ آخر مودی حکومت اس مسئلہ پر خاموشی کیوں اختیار کرلی ہے۔ وزیراعظم ہر مسئلہ پر ٹوئیٹ کرتے ہیں اور اس سنگین معاملہ پر آخر چپ کیوں ہیں۔ وزیراعظم پر شدید تنقید کرتے ہوئے ملکارجن کھرگے نے کہا کہ مودی کو بیرونی قائدین کے ساتھ گلے ملنے میں لطف آرہا ہے۔ وہ صدر چین ژی ژپنگ کے ساتھ بیٹھ کر وقت گذارتے ہیں مگر اس اہم مسئلہ کو ہرگز نہیں اٹھایا۔ ترنمول کانگریس نے سگتا رائے نے کہا کہ حکومت کو امریکہ میں مقیم ہندوستانیوں کے مفادات کا تحفظ کرنے میں کوئی دلچسپی معلوم نہیں ہوتی۔ ہندوستانیوں کے تئیں امریکہ میں نفرت کا ماحول پیدا کیا جا رہا ہے اور بھارت پر حملے ہو رہے ہیں۔ اس طرح کے ایک حملے میں گزشتہ دنوں ہندوستانی نژاد انجینئر مارا گیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر خارجہ بیمار ہیں اس لیے وزیر اعظم نریندر مودی کو خود اس سلسلے میں ایوان میں بیان دینا چاہئے ۔ترنمول کانگریس کے سوگت رائے نے کہا کہ امریکہ میں ہندوستانیوں کے خلاف نفرت کا ماحول پیدا کیا جا رہا ہے اور اسی کا نتیجہ ہے کہ حال ہی میں ہندوستانی سافٹویئر انجینئرسرنیواس کو قتل کیا گیا ہے ۔ انہوں نے اس واقعہ کی مذمت کی اور کہا کہ یہ بیرون ملک میں رہنے والے ہندوتانیوں کی حفاظت سے منسلک معاملہ ہے اس لئے وزیر اعظم کو اس بارے میں ایوان میں بیان دینا چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT