Friday , January 19 2018
Home / دنیا / امریکہ میں ہیتی اور افریقی ممالک کے تارکین وطن کیلئے کوئی جگہ نہیں : ٹرمپ

امریکہ میں ہیتی اور افریقی ممالک کے تارکین وطن کیلئے کوئی جگہ نہیں : ٹرمپ

افریقی ممالک کیلئے نازیبا الفاظ کااستعمال
سیلواڈور کے دو لاکھ افراد کو امریکہ سے نکالا جائیگا
ناروے جیسے ممالک کے شہریوں کو ترجیح

واشنگٹن ،12جنوری (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے جمعرات کو کہا کہ امریکہ ہیتی اور افریقی ملکوں کے تارکین وطن کو کیوں آنے دیتا ہے ۔اس دوران انہوں نے کچھ ملکوں کے لئے نازیبا الفاظ کا استعمال کیا۔دو خفیہ ذرائع کے مطابق جمعرات کو جب ڈیموکریٹک سینیٹر ڈک ڈربن اور ریپبلیکن سینیٹر لنزے گراہم صدر کے سامنے دونوں جماعتوں کے سینیٹروں کے گروپوں کے ذریعہ پیش کئے گئے نئے تارکین وطن بل کے بارے میں بتا رہے تھے ۔انہوں نے بتایا کہ اس بات چیت کے دوران دیگر انتظامیہ افسر بھی موجود تھے ۔انہوں نے بتایا کہ یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب مسٹر ٹرمپ کے قانونی صلاح کار انہیں تارکین وطن پروگراموں کے بارے میں بتا رہے تھے جن میں قدرتی آفات یا گھریلو تشدد سے متاثر لوگ امریکہ میں محفوظ مقام کی تلاش میں رہنے آتے ہیں۔ایک ذرائع کے مطابق مسٹر ٹرمپ نے کہا کہ انہیں افریقہ جیسے ملکوں کے شہریوں کی کیا ضرورت ہے ۔بات چیت کے دوران انہوں نے افریقی ملکوں کے لئے نازیبا الفاظ کا استعمال کیا۔انہوں نے کہا کہ ان کے پاس ناروے جیسے ملکوں کے اور شہری ہونے چاہئے ۔دوسرے ذرائع نے بتایا کہ مسٹر ٹرمپ نے امریکہ کے لئے ہیتی کے شہریوں کی ضرورت پر سوال اٹھائے ۔پروگرام کا نام عارضی تحفظ مرحلہ(ٹی پی ایس )تھا۔مسٹر ٹرمپ نے ال سلواڈور کے تارکین وطن کو امریکہ میں رہنے کے لئے اب اور اجازت دینے سے منع کردیا جس سے امریکہ میں رہ رہے سلواڈور نژاد کے دو لاکھ افراد کو امریکہ سے ہٹایا جارہا ہے ۔دو طرفہ اجلاس کے منصوبے کے مطابق ٹی پی ایس کو چلائے رکھنے کے بدلے مختلف قسم کی لاٹری پروگرام کو ختم کرنے یا بدلنے سے دیگر ملکوں کے کچھ تارکین وطن کے ساتھ ایک سال میں تقریباً 50ہزار لوگوں کو امریکہ میں رہنے کی اجازت دینے کا منصوبہ ہے ۔مسٹر ٹرمپ کے طنز کے سلسلے میں پوچھنے پر وائٹ ہاؤس کے ترجمان راج شاہ نے کہا کہ واشنگٹن کے کچھ لیڈران دوسرے ملکوں کے لئے لڑرہے ہیں جبکہ صدر ٹرمپ ہمیشہ امریکی عوام کے لئے لڑیں گے ۔مسٹر شاہ نے کہا کہ میرٹ کی بنیاد پر تارکین وطن کو ترجیح دینے والے دیگر ملکوں کی طرح ہی مسٹر ٹرمپ اس کا مستقل حل چاہتے ہیں جس سے امریکہ کی معیشت کو بڑھانے،یہاں کے سماج اور ماحول میں ڈھل کر امریکہ کو اور مضبوط بنانے والے لوگوں کا استقبال کیا جاسکے ۔میٹنگ میں موجود ایک دیگر ذرائع نے کہا کہ مسٹر ٹرمپ نے میٹنگ میں سوال اٹھایا کہ امریکہ غیر تربیت یافتہ ملازم کی جگہ پر تعلیم یافتہ ملازم کو ترجیح کیوں نہیں دیتا۔ذرائع کے مطابق مسٹر ٹرمپ کا مقصد کسی کا مذاق اڑانا نہیں تھا۔ڈونالڈ ٹرمپ نے کہاکہ وہ امریکیوں کی صیانت اور حفاظت چاہتے ہیں اور اس کے لئے زبردست پیمانے پر منشیات کی آمد روکنا چاہتے ہیں جس کی وجہ سے انہوں نے تارکین وطن کی آمد پر پابندیاں عائد کی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ اپنے ملک کے دفاع کیلئے فوج کو امداد فراہم کرنا چاہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT