Thursday , February 22 2018
Home / Top Stories / امریکہ کا استحصال کرنے والے ممالک پر ’’جوابی زائد ٹیکس‘‘ نافذ ہوگا : ٹرمپ

امریکہ کا استحصال کرنے والے ممالک پر ’’جوابی زائد ٹیکس‘‘ نافذ ہوگا : ٹرمپ

چین ،جاپان اور جنوبی کوریا امریکہ کو لوٹ کھسوٹ رہے ہیں
واشنگٹن ۔ 13 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے آج ایک نئی دھمکی دیتے ہوئے ان ممالک کو ’’ہوشیار باش‘‘ کا پیغام دیدیا ہے جو امریکہ کے ساتھ تجارتی تعلقات کا استحصال کرنے کے مرتکب پائے جائیں گے۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ ایسے ممالک پر ’’زائد ٹیکس‘‘ کا نفاذ کیا جائے گا جس کی مزید تفصیلات آئندہ ہفتہ جاری کی جائیں گی۔ ٹرمپ نے وائیٹ ہاؤس میں گورنرس کے گروپ اور مقامی قائدین کا ایک اجلاس منعقد کیا تھا جہاں وہ 1.5 کھرب امریکی ڈالرس کے مصارف سے تعمیر ہونے والے انفراسٹرکچر کی تجویز پر تبادلہ خیال کرنے جمع ہوئے تھے جوکل ہی کانگریس کو روانہ کی گئی ہے۔ یاد رہیکہ ٹرمپ اس نوعیت کے ’’جوابی زائد ٹیکس‘‘ کے نفاذ کا خیال پہلے بھی ظاہر کرچکے ہیں جہاں انہوں نے ایسے ممالک بشمول اپنے حلیفوں پر زائد ٹیکس کے نفاذ کی بات کہی تھی بشرطیکہ وہ ممالک امریکہ کے استحصال کے مرتکب پائے جائیں۔ صدر نے نارتھ امریکن فری ٹریڈ ایگریمنٹ (NAFTA) پر جاری بات چیت کا بھی تذکرہ کیا اور شکایت کی کہ کینیڈا جو اس ٹریڈ معاہدہ میں امریکہ اور میکسیکو کا شراکت دار ہے، امریکہ سے اس کا برتاؤ مناسب نہیں ہے۔ انہوں نے میکسیکو کے بارے میں بھی یہی شکایت کی۔ اپنی بات جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم اب یہ برداشت نہیں کرسکتے کہ دیگر ممالک امریکہ کا استحصال کریں۔ ہم اب ایسا نہیں کرسکتے کہ لوگ امریکہ آئیں اور ہمیں ہی لوٹ کھسوٹ کر چلے جائیں۔ ہم پر نرخ اور ٹیکسیس کا اندھادھند نفاد کریں جبکہ ہم ان سے کچھ بھی وصول نہیں کرتے۔ اب ہم ایسا نہیں ہونے دیں گے۔ اسی لئے ’’جوابی زائد ٹیکس‘‘ کا نفاذ وقت کی اہم ضرورت ہے۔ ٹرمپ نے شکایات کی کہ امریکہ کو چین، جاپان، جنوبی کوریا کے ساتھ تجارت کے شعبہ میں خطیر رقمی نقصانات کا سامنا ہے۔

TOPPOPULARRECENT