Monday , October 22 2018
Home / Top Stories / امریکہ کو دھمکیوں کے خلاف اردغان کا انتباہ

امریکہ کو دھمکیوں کے خلاف اردغان کا انتباہ

انقرہ ۔12اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) ترک صدر رجب طیب اردغان نے کہا ہے کہ وہ امریکی دھمکیوں میں نہیں آئیں گے۔ ہفتے کے دن اونیے شہر میں ایک عوامی خطاب سے انہوں نے کہا کہ امریکہ اور ترکی کے تعلقات خطرے میں پڑ سکتے ہیں۔ انہوں نے خبردار کیا کہ یوں ترکی نئے اتحادیوں کی تلاش شروع کر سکتا ہے۔ ترکی میں قید امریکی پادری اور دیگر سفارتی معاملات پر ان دونوں ممالک میں کشیدگی بڑھتی جا رہی ہے۔ اردغان نے کہا کہ امریکہ کو شرم آناچاہیئے کہ وہ ایک پادری کی خاطر ناٹو اتحادی ملک سے تعلقات خراب کر رہا ہے۔ترکی کے صدر رجب طیب اردغان نے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے ا سٹیل اور ایلومینیم پر محصول دگنا کرنے پر امریکہ کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اگر امریکہ اپنے یک طرفہ اور غیر مہذب رجحانات کو ترک نہیں کرتا تو ترکی اپنے لیے نئے دوستوں اور اتحادیوں کو دیکھے گا۔صدر ایردوان نے امریکہ سے اپنی رنجش کے بارے میں مزید کہا کہ ’وہ (امریکہ) شام میں کردوں کو مسلح کر رہا ہے اور مذہبی مبلغ فتح اللہ گولن کو حوالہ کرنے میں قاصر رہا ہے۔انہوںنے کہا کہ امریکہ کی طرف سے امریکی پادری اینڈریو برنسن کے معاملے پر کشیدگی کو ہوا دی جا رہا ہے۔لیرا کی قدر میں کمی پر ترکی کے صدر اردغان نے کہا کہ یہ کمی اس مہم کا حصہ ہے جس کی قیادت غیر ملکی طاقتیں کر رہی ہیں۔ترکی نے متنبہ کیا ہے کہ وہ امریکہ کی جانب سے ٹیرف میں اضافے کے خلاف قدم اٹھائے گا۔۔ ترک حکام امریکہ میں جلا وطن ترک رہنما فتح اللہ گولن کو سنہ 2016 کی بغاوت کو منظم کرنے کا الزام عائد کرتے ہیں۔اس سے پہلے ہفتے کو امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے ترکی کی ا سٹیل اور ایلومینیم پر محصول دگنا کر دیا جس کے باعث ترکی کی کرنسی لیرا کی قدر میں 20 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔ایک ٹوئٹ میں امریکی صدر نے کہا ’لیرا ہمارے مضبوط ڈالر کے مقابلے میں کمزور تھا‘ اور یہ کہ اس وقت امریکہ کے ترکی کے ساتھ تعلقات اچھے نہیں ہیں ۔ امریکہ اور ترکی ناٹوکے ارکان ہیں اور دونوں میں کئی مسائل پر اختلافات ہیں

TOPPOPULARRECENT