Sunday , February 18 2018
Home / دنیا / امریکہ کی نئی نیوکلیئر پالیسی سے دنیا کا خاتمہ قریب

امریکہ کی نئی نیوکلیئر پالیسی سے دنیا کا خاتمہ قریب

ایران کا انتباہ ‘ وزیر خارجہ ایران جواد ظریف کا بیان‘ پاکستان کا بھی اظہار تشویش

تہران۔4فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ کی نئی نیوکلیئر پالیسی عالم انسانیت کیلئے سنگین خطرہ ہے اور دنیا خاتمہ کے قریب پہنچ گئی ہے ۔ ایران کے وزیر خارجہ محمد جوادظریف نے کل تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کی نئی نیوکلیئر پالیسی کے نتیجہ میں دنیا کا خاتمہ قریب آتا نظر آرہا ہے ۔ امریکہ کے محکمہ دفاع پنٹگان نے کل اپنے نیوکلئیر اسلحہ کے ذخیرہ میں ردوبدل کے منصوبے کا انکشاف کیا ہے ۔ خاص طور پر اسلحہ کے ذخیرہ میں اضافہ کا اعلان کیا ہے تاکہ روس کی دھمکی کا جواب دیا جاسکے ۔ جواد ظریف نے کہا کہ نئی پالیسی بین الاقوامی نیوکلئیر عدم پھیلاؤ معاہدہ کی خلاف ورزی ہے اور اس سے دنیا کا خاتمہ ہونے کا اندیشہ ہے ۔ امریکہ کی نئی نیوکلیئر پالیسی پر نظرثانی کی جانی چاہیئے کیونکہ اس سے نیوکلئیر عدم پھیلاؤمعاہدہ کی خلاف ورزی ہوگی اور دیگر ممالک کو بھی ایسی خلاف ورزی کی تحریک ملے گی ۔ عالم انسانیت تباہی کے قریب پہنچ جائے گا ۔ جواد ظریف نے کہا کہ امریکہ 2015ء میں ایران کے ساتھ کئے ہوئے نیوکلیئرمعاہدہ کی اہمیت کم کرنا چاہتا ہے ۔ صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے مطالبہ کیا ہے کہ اس معاہدہ کے بارے میں دوبارہ بات چیت کی جائے ۔ ڈونالڈ ٹرمپ نے ہلاکتوں پر اظہار افسوس کیا ہے اور یہ ایک خطرناک رجحان ہے کہ لوگوں کی ہلاکت کی وجہ بننے پر اس پر اظہار افسوس کیا جائے ۔ جواد ظریف نے اپنی تحریر میں نیوکلیئر معاہدہ کو تیکنیکی نام دینے پر زور دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کی نئی نیوکلیئر پالیسی شائع ہوچکی ہے اور پاکستان نے اس کو وسیع تر اسلحہ کا ذخیرہ قرار دیا ہے جس کی وجہ سے ایسے ممالک جن کا ذخیرہ چھوٹا ہے اور جن کی آمدنی بھی کم ہے خطرناک قرار دیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT