Sunday , November 18 2018
Home / دنیا / امریکہ کی 128 مصنوعات پر چین کی جانب سے زائد ٹیکس کا نفاذ

امریکہ کی 128 مصنوعات پر چین کی جانب سے زائد ٹیکس کا نفاذ

بیجنگ ۔ 2 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) چین نے امریکہ کی 128 مصنوعات پر نئے ٹیکس کا نفاذ کیا ہے جن میں پھل اور خنزیر کا گوشت بھی شامل ہے جس کی قدر 3 بلین ڈالرس بتائی گئی ہے۔ ٹرمپ انتظامیہ کی جانب سے اسٹیل اور المونیم کی درآمد پر جس طرح زائد ڈیوٹی کا نفاذ کیا گیا ہے اس کے جواب میں چین نے بھی امریکی مصنوعات پر زائد ٹیکس کا نفاذ عمل میں آیا ہے۔ وزارت کامرس کی جانب سے جاری کئے گئے ایک بیان میں یہ بات کہی گئی جس کے مطابق مرکزی کابینہ نے 120 امریکی مصنوعات پر 15 فیصد زائد ٹیکس کا نفاذ کیا ہے جن میں پھل اور دیگر متعلقہ اشیاء کے علاوہ آٹھ مصنوعات پر 25 فیصد زائد ٹیکس کا نفاذ کیا ہے جن میں خنزیر کا گوشت اور دیگر متعلقہ اشیاء شامل ہیں جو امریکہ سے درآمد کی جاتی ہیں۔ چین کا یہ فیصلہ دراصل امریکہ کے اس فیصلہ کی جوابی کارروائی ہے جو اس نے اسٹیل اور المونیم پر زائد ٹیکس کی صورت میں عائد کی ہیں۔ یاد رہیکہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے 23 مارچ کو ایک یادداشت پر دستخط کی ہے جس کے تحت چین سے درآمد ہونے والی اشیاء پر 60 بلین ڈالرس تک زائد ٹیکس کا نفاذ کیا جاسکتا ہے جبکہ چین کی جانب سے امریکہ میں سرمایہ کاری کے مواقع بھی محدود کردیئے گئے ہیں۔ چین کی وزارت کامرس نے گذشتہ ہفتہ اعلان کیا تھا کہ وہ امریکہ کی 128 مصنوعات پر ٹیکس مراعات کو ختم کرنے پر غوروخوض کررہی ہے جن میں شراب، خنزیر کا گوشت، سیم لیس اسٹیل ٹیوبس شامل ہے جن کی قدر 3 بلین ڈالرس تک ہوسکتی ہے۔ ژینہوا خبر رساں ایجنسی نے آج یہ رپورٹ دی۔

TOPPOPULARRECENT