Sunday , November 19 2017
Home / دنیا / امریکہ ‘ ہزار سال قدیم شیوا پاروتی کا مجسمہ ہندوستان کو واپس کریگا

امریکہ ‘ ہزار سال قدیم شیوا پاروتی کا مجسمہ ہندوستان کو واپس کریگا

نیویارک 19 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ ‘ ہندوستان کو ایک 1000 سال قدیم تاریخی چولا دور کا شیوا اور پاروتی کا کانسہ کا مجسمہ واپس کرنے کا منصوبہ رکھتا ہے جسے ہندوستانی امریکی رسوائے زمانہ آرٹ ڈیلر سبھاش کپور نے چوری کرتے ہوئے امریکہ منتقل کردیا تھا ۔ کانسہ کا یہ مجسمہ فی الحال امریکی امیگریشن و کسٹمز انفورسمنٹ کی ہوم لینڈ سکیوریٹی تحقیقاتی ٹیم کی تحویل میں ہے ۔ اس مجسمہ کو چھ دوسرے چولہ دور کے کانسہ کی اشیا کے ساتھ ہندوستان واپس بھیج دیا جائیگا ۔ عہدیداروں نے یہ بات بتائی ۔ یہ مجسمہ ٹاملناڈو کی ایک مندر سے لوٹا گیا تھا اور اسے غیر قانونی طور پر امریکہ لایا گیا تھا ۔ اس مجسمہ کو بعد ازاں ڈیوڈ اوسلے میوزیم آف آرٹ کی جانب سے بال اسٹیٹ یونیورسٹی انڈیانا کے حوالے کردیا گیا تھا ۔ کہا گیا ہے کہ یہ مجسمہ چولا دور حکومت 860-1279 کا ہے ۔

سے سبھاش کپور کی ہدایت پر غیر قانونی طور پر امریکہ منتقل کیا گیا تھا ۔ عہدیداروں کا کہنا ہے کہ سبھاش کپور نے شیوا اور پاروتی کے اس مجسمہ کو اس کے حقیقی مقام کو مسخ کرتے ہوئے فروخت کیلئے پیش کیا تھا ۔ 2005 میں بال اسٹیٹ یونیورسٹی کے نمائندے اس کا شکار ہوئے تھے جنہیں سبھاش کپور جھانسہ دینے میں کامیاب ہوگیا تھا ۔ ایچ ایس آئی کے ایجنٹس نے سبھاش کپور کے جھانسہ کو بے نقاب کیات ھا ۔ تاحال اس کے خصوصی ایجنٹس نے میان ہاٹن کے پراسکیوٹر دفتر کے ساتھ جملہ 2,500 سے زیادہ قیمتی اشیا کو ضبط کیا ہے جن کی مالیت 100 ملین امریکی ڈالرس سے زیادہ بتائی جاتی ہے ۔ اس مجسمہ کو ہندوستان لانے سے قبل نیویارک منتقل کیا جائیگا جہاں اسے سبھاش کپور کے خلاف ثبوت کے طور پر استعمال کیا جائیگا ۔ قانونی و دوسری کارروائیوں کی تکمیل کے بعد اس مجسمہ کو ہندوستان واپس روانہ کردیا جائیگا ۔

TOPPOPULARRECENT