Saturday , November 25 2017
Home / Top Stories / امریکی ریاست ٹیکساس میں خوفناک آندھی ’ہاروی‘ سے بدترین تباہی

امریکی ریاست ٹیکساس میں خوفناک آندھی ’ہاروی‘ سے بدترین تباہی

متعدد عمارتیں منہدم،تین لاکھ مکانات برقی سے محروم،آئیل ریفائنریز بھی متاثر، 10 افراد زخمی، 40 ارب ڈالر کے نقصانات

ہوسٹن۔/26اگسٹ، ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکی ریاست ٹیکساس میں خوفناک طوفان ’’ہاروی‘‘ کے سبب آج بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی۔ 130میل فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی آندھی اور موسلادھار بارش کئی درختوں، برقی کھمبوں اور چھوٹے گھرانوں کو بہا لے گئی۔ متعدد عمارتیں منہدم ہوگئیں۔ برقی شارٹ سرکٹ سے کئی عمارتیں آگ کے شعلوں میں خاکستر ہوگئیں۔ تقریباً300,000 گھر برقی سربراہی سے محروم ہوگئے۔ پارک کی گئیں چند موٹر کاریں پانی میں بہہ گئیں۔ ریاست کے مختلف حصوں میں طوفانی ہواؤں کے ساتھ 40 انچ بارش کی پیش قیاسی کی گئی ہے۔ ابتدائی سرکاری اعداد کے مطابق مختلف مقامات پر 10 افراد زخمی ہوئے ہیں۔ 40 ارب ڈالر کے مالی نقصانات ہوئے ہیں۔ لاکھوں افراد کو محفوظ مقامات کو منتقل کیا گیا ہے۔ امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے ٹیکساس میں ایمرجنسی کے احکام جاری کرتے ہوئے متعلقہ محکمہ جات کو متحرک کردیا ہے۔ ٹرمپ نے ٹوئیٹر پیغام میں ٹیکساس کے عوام کی ممکنہ مدد کا تیقن دیا ہے۔

اسی دوران محکمہ موسمیات نے کہا ہے کہ ’ ہاروی ‘ کے پہلے دن ہفتہ کو پیدا شدہ یہ صورتحال آنے والے مزید مشکل دنوں کی ابتداء ہے اور آئندہ دو تین دن میں صورتحال مزید سنگین ہوسکتی ہے۔ امریکہ کے اندرونی علاقوں سے ٹکرانے والا گذشتہ 12سال کے دوران یہ سب سے طاقتور طوفان ہے جس سے ٹیکساس میں آئیل ریفائنری کی صنعت کو بھاری نقصانات پہنچے۔ طوفان کی صورتحال پر نظر رکھنے والے قومی مرکز نے کہا کہ طوفان ’’ ہاروی ‘‘ ٹیکساس میں پورٹ آسنساس اور پورٹ اوکونر سے ٹکرایا۔ امریکی تیل پیداوار کا تقریباً 17 فیصد حصہ اس ریاست سے ہی آتا ہے جہاں ملک میں تیل صفائی کے 50 فیصد صنعتیں موجود ہیں۔ امریکہ کے کسی اندرونی علاقہ میں 2005 کے بعد یہ پہلا طاقتور طوفان ہے جس سے لاکھوں افراد متاثر ہوئے۔ کئی گھنے درخت جڑ سے اُکھڑ کر سڑکوں پر گر پڑے۔ اکثر مقامات پر برقی کھمبے گرنے کے بعد بعض علاقے مکمل تاریکی میں ڈوب گئے۔ طوفانی ہواؤں کے پہونچنے سے قبل ہی مقامی عوام نے غذاء ، پانی اور گیس کا ذخیرہ کرلیا تھا۔ اس دوران کئی ایر لائینس اداروں نے اپنے طیاروں کی پروازیں منسوخ کردیں۔ اسکولوں، کالجوں کو بند کردیا گیا، اہم پروگرامس منسوخ کردیئے گئے۔ ہوسٹن کے میئر سلوسٹر ٹرنر نے کہا کہ ’’ اس شہر میں طوفانی ہواؤں کا نہیں بلکہ شدید بارش کا اندیشہ تھا۔‘‘ ڈونالڈ ٹرمپ انتظامیہ کیلئے ’’ ہاروی ‘‘ قدرتی آفات کا پہلا سالانہ تجربہ ہے۔ صدر ٹرمپ نے ٹیکساس اور لویٹسیانا کے گورنروں سے بات چیت کے دوران ممکنہ اعانت کا یقین دلایا۔

TOPPOPULARRECENT