Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / امریکی سرحد پر میکسیکو کے ہزاروںافراد کی انسانی دیوار

امریکی سرحد پر میکسیکو کے ہزاروںافراد کی انسانی دیوار

ٹرمپ کے متنازعہ منصوبوں کے خلاف نعرے، احتجاج میں سرحدی امریکی شہر کے میئر کی شرکت

کوئیدادجواریز(میکسیکو ) ۔/18 فبروری( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ اور میکسیکو کے درمیان دیوار تعمیر کرنے پڑوسی ملک کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے منصوبہ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے میکسیکو کے ہزاروں افراد نے ایک دوسرے کے ہاتھ ملاتے ہوئے اپنے ملک کی سرحد پر ایک طویل ’ انسانی دیوار‘ بنائی۔ میکسیکو کے مقامی حکام اور انسانی حقوق کے مختلف اداروں کے زیر اہتمام گذشتہ روز منعقدہ اس منفرد احتجاج میں شامل افراد جن میں سیاسی و سماجی قائدین اور طلبہ کی کثیر تعداد شامل تھی ہمہ اقسام کے رنگ برنگے پھولوں سے لیس تھے اور پڑوسی امریکی شہر الپاسو سے پہلے ہی سے ایک بڑی فصیل کے ذریعہ تقسیم اپنے سرحدی ٹاؤن کیوڈاد پر جمع ہوئے تھے۔ برہم مظاہرین نے اس احتجاج کے دوران امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے خلاف خوب نعرہ بازی کی جنہوں نے میکسیکو سے غیر قانونی ایمیگرینٹس کے امریکہ میں داخلہ کو روکنے کیلئے دونوں ملکوں کی سرحد کے درمیان بڑی دیوار تعمیر کرنے کا منصوبہ بناتے ہوئے میکسیکو سے اس کے مصارف ادا کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔ ایک طالبہ 31سالہ کیرولینا سولیس نے کہا کہ’’ یہ دیوار ایک بدترین خیال ہے اس سے منشیات کی اسمگلنگ یا تارکین وطن کی منتقلی یا کچھ دوسری سرگرمی نہیں روکی جاسکتی۔‘‘ کیرولینا نے مزید کہا کہ ’’ یہ ( دیوار کی تعمیرکا منصوبہ ) دراصل ٹرمپ کی نفرت انگیز ذہنیت کی علامت ہے اور صدر کی نسل پرستی ہے۔‘‘ اس احتجاج پر امریکی بارڈ پٹرول افسران کڑی نظر رکھے ہوئے تھے جن کے روبرو ہزاروں مظاہرین نے جن میں الپاسو کے میئر آسکرلیسر بھی شامل تھے 1.5کیلو میٹر طویل انسانی دیوار بنائی۔ دونوں جانب کے سینکڑوں افراد روز مرہ سرحد عبور کرتے ہیں اور اس علاقہ کو ایک ہی ملک اور گھر تصور کرتے ہیں اور ایک دوسرے ملک میں روز مرہ کے کام پر جایا کرتے ہیں۔ میئر یسر نے کہا کہ ’’ کوئیداد جواریز اور الہاسو ایک ہی شہر ہیں اور کبھی ایک دوسرے سے جدا نہیں ہوسکتے۔ یسر اگرچہ اب اس سرحدی امریکی شہر کے میئر ہیں لیکن سرحد کے اس پار میکسکو میں پیدا ہوئے تھے۔ میکسیکو شہر کوئیداد جواریز کے میئر آرمانڈو کیاڈا نے امریکہ سے ملک بدر کئے جانے والے ایمیگرینٹس کو موثر امداد و بازآبادکاری کا عہد کیا۔ انہوں نے کہا کہ ٹرمپ محض امریکہ میں رہنے والے ہمارے وطنوں میں خوف پیدا کررہے ہیں ہمیں ان افراد سے یگانگت کا اظہار کرنا چاہیئے اور واضح طور پر یہ کہہ دینا چاہیئے کہ انھیں ہماری تائید حاصل ہے اور اگر ( امریکہ سے ) ملک بدر کئے جاتے ہیں تو اپنے دونوں ہاتھ کھول کر ان کا خیرمقدم کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT