Wednesday , December 19 2018

امریکی سفارتخانہ کی یروشلم منتقلی پر عربوں اور مسلمانوں کی تنقید

یروشلم ۔ 14 مئی (سیاست ڈاٹ کام) عرب لیگ اور سنی مسلم علمائے دین نے امریکی سفارتخانہ کو تل ابیب سے یروشل منتقل کرنے کے اقدام کو ہدف تنقید بنایا اور عالمی برادری سے خواہش کی کہ وہ اس ’’غیرمنصفانہ فیصلہ‘‘ اور اسرائیل کی جانب سے یروشلم پر غاصبانہ قبضہ کی مذمت کرے۔ انہوں نے اس اقدام کو ایک جارحانہ اقدام قرار دیا جس نے عربوں اور مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی ہے اور ساتھ بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی بھی کی ہے جس سے خطہ میں عدم استحکام پیدا ہوجائے گا۔ یاد رہیکہ فلسطینی شہری اپنے ’’مستقبل کے ملک‘‘ کیلئے مشرقی یروشلم کو اس کا دارالحکومت تصور کرتے ہیں۔ انہوں نے چہارشنبہ کو عرب لیگ کا فوری اجلاس طلب کیا ہے۔ امریکہ پیر کے روز یروشلم میں نئے امریکی سفارتخانہ کا افتتاح انجام دے گا۔

TOPPOPULARRECENT