Tuesday , December 11 2018

امریکی شٹ ڈاؤن ‘ قیادت کے منہ پر طمانچہ:چین

بیجنگ، 21 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) چین نے کہا ہے کہ امریکہ میں شٹ ڈاؤن یا کام کاج کی بندی سے امریکی سیاسی نظام میں طویل عرصہ سے چلی آرہی خامیوں اجاگر ہو گئی ہیں۔ قابل غورہے کہ امریکی سینیٹ نے اخراجات بل کو کل مسترد کر دیا تھا جس کی وجہ سے پانچ برسوں میں پہلی بار حکومت کا کام کاج رسمی طور پر بند ہو گیا۔ سینیٹ نے سرکاری خزانے سے وفاقی حکومت کے اخراجات کو چلانے کے لئے مختصر مدت بل کو منظوری نہیں دینے سے حکومت کا کام کاج بند ہو گیا ہے ۔ سینیٹ میں اس مختصر مدت کے اخراجات بل کی حمایت میں 50 ووٹ پڑے اور مخالفت میں محض 48 ووٹ۔چین کی سرکاری خبررساں ایجنسی ژنہوا نے آج اس معاملہ میں ردعمل ظاہرکرتے ہوئے کہا “یہ بھی ایک المیہ ہے کہ یہ صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے صدر کے ایک سال کی مدت کی پہلی سالگرہ کے موقع پر ہوا ہے جو امریکی قیادت کے منہ پر ایک زوردار طمانچہ ہے ۔ ٹرمپ انتظامیہ نے سابق صدر براک اوباما کے دور اقتدار کی پالیسیوں کو کھائی میں پہنچا دیا ہے جن میں بحر الکاہل پار کاروباری تعاون معاہدہ اور پیرس موسمیاتی معاہدہ میں امریکی شرکت اہم تھی۔ اگر اقتدار تبدیلی کو وراثت بھی مان لیا جائے تو بھی مختلف پارٹیوں میں نااتفاقی کا رخ ہی دکھائی دیا ہے ۔ مغربی ممالک کی جمہوری نظام کو ایک طرح سے مکمل ہی سمجھا جاتا ہے لیکن امریکہ میں کل جو ہوا اس سے دنیا میں یہی پیغام گیا ہے کہ وہاں کے سیاسی نظام میں کہیں نہ کہیں افراتفری آ چکی ہے ”۔کام بندی یا شٹ ڈاؤن ایسے وقت میں لاگو ہوئی ہے کہ جب ہفتہ 20 جنوری کو امریکی صدر کے دور کا ایک سال مکمل ہو گیا ہے ۔ شٹ ڈاؤن کی وجہ سے مسٹر ٹرمپ نے اپنے دور کی پہلی سالگرہ کے موقع پر فلوریڈا میں منعقد پارٹی میں شامل ہونے کے پروگرام کوبھی ملتوی کر دیا۔اس شٹ ڈاؤن سے امریکی فوج کے آنجہانی فوجیوں کے اہل خانہ کو حکومت سے مالی امداد ملنا بند ہو گئی ہے ، لیکن اس سے سینیٹ اور ایوان نمائندگان کے ارکان کی تنخواہ میں کوئی رکاوٹ نہیں آئی ہے ۔ امریکی آئین میں انتظام ہے کہ ممبران پارلیمان کو ہر حال میں تنخواہ دی جائے ۔ فوجیوں کے اہل خانہ کو سرکاری خزانے کے بجائے اس شٹ ڈاؤن کے دوران خیراتی اداروں کی طرف سے مالی مدد دی جائے گی، جو بعد میں حکومت سے اس اخراجات کی تلافی لے سکتی ہے ۔امریکہ میں 1976 کے بعد سے اب تک 18 بارشٹ ڈاؤن ہو چکا ہے ۔ آخری بار سال 2013 میں صدر بارک اوباما کے دور میں ریپبلکن پارٹی کے اراکین نے ہیلتھ بل کو لے کر کے 16 دنوں تک کام کاج بند کروایا تھا۔ریپبلکن اور ڈیموکریٹک پارٹیوں کے اپنے اپنے موقف پر اڑے رہنے کی وجہ سے اس بار کام بندی کے جلد ختم ہونے کے آثارنظر نہیں آ رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT