Monday , November 20 2017
Home / دنیا / امریکی نائب صدر بائیڈن دستبردار، ہلاری کی راہ آسان

امریکی نائب صدر بائیڈن دستبردار، ہلاری کی راہ آسان

واشنگٹن۔ 22 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکی نائب صدر جو بائیڈن 2016ء کے صدارتی انتخابات لڑنے سے دستبردار ہو گئے جس کے بعد صدارتی امیدوار نامزد ہونے ہلاری کلنٹن کیلئے مزید آسانی پیدا ہوگئی ہے۔ وائٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے امریکی نائب صدر جو بائیڈن نے کہا کہ وہ 2016 کے صدارتی انتخابات میں حصہ نہیں لے رہے۔ اس موقع پر وائٹ ہاؤس میں جوبائیڈن کے ہمراہ ان کی اہلیہ اور امریکی صدر براک اوباما بھی موجود تھے۔ جوبائیڈن کا مزید کہنا تھا کہ ’’میں اب صدارتی امیدوار نہیں ہوں، تاہم واضح اور مؤثر طور پر پارٹی کا موقف پیش کرتا رہوں گا‘‘۔ ہلاری کلنٹن کے ساتھ ساتھ اب ڈیمو کریٹک پارٹی کے دوسرے مقبول امیدوار سنیٹر برنی اسینڈرز ہیں۔ امریکی نشریاتی ادارے سی این این کی رپورٹ کے مطابق 72 سالہ جو بائیڈن کی دستبرادری کے بعد 67 سالہ ہلاری کلنٹن ڈیمو کریٹک پارٹی کیلئے با آسانی صدارتی امیدوار نامزد ہو سکتی ہیں۔ رپورٹ کے مطابق جوبائیڈن کے دستبردار ہونے کے بعد ہلاری کلنٹن کی نامزدگی کا امکان 56 فیصد جبکہ سنیٹر برنی سینڈرز کی نامزدگی کا امکان 33 فیصد ہو گیا ہے۔

خیال رہے کہ جوبائیڈن گزشتہ 40 سال سے امریکہ کے قانون ساز رکن منتخب ہوتے آرہے ہیں۔ 1972 میں پہلی بار وہ ڈیلاوئیر سے ایوان بالا کے رکن بنے تھے۔ وہ 2 بار پہلے بھی صدارتی امیدوار نامزد ہونے کیلئے انتخاب میں حصہ لے چکے ہیں مگر 1988 اور 2008 میں دونوں بار ان کو ناکامی کا سامنا کرنا پڑا۔ واضح رہے کہ رواں برس مئی میں جو بائیڈن کے بیٹے کا کینسر سے انتقال ہو گیا تھا جس کے بعد امریکہ میں یہ عمومی تاثر تھا کہ وہ امیدوار نامزد ہونے کیلئے مجوزہ مباحثوں میں مؤثر انداز سے حصہ نہیں لے سکیں گے۔ ڈیمو کریٹک پارٹی کی صدارتی امیدوار بننے کی خواہشمند ہلاری کلنٹن اور برنی سینڈرز نے جوبائیڈن کے فیصلے کے بعد تہنیتی پیغام دیئے ہیں۔ امریکہ کی برسراقتدار ڈیموکریٹک پارٹی کی حریف جماعت ری پبلکن پارٹی کے صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ نے بھی جو بائیڈن کے فیصلے کو سراہتے ہوئے کہا کہ جوبائیڈن نے اپنے اور خاندان کیلئے درست فیصلہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT