Monday , January 22 2018
Home / دنیا / امریکی یونیورسٹی میں ہندو مذہبی علامت ’’سواستک‘‘ پر امتناع زیر غور

امریکی یونیورسٹی میں ہندو مذہبی علامت ’’سواستک‘‘ پر امتناع زیر غور

واشنگٹن /24 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) باوقار جارج واشنگٹن یونیورسٹی نے سواستک پر امتناع عائد کرنے پر غور شروع کردیا ہے۔ یہ ہندوؤں اور بدھ مت کے پیروؤں کی ایک مقدس علامت ہے۔ عہدہ داروں کا خیال ہے کہ یہ نازی علامت کے مماثل ہے اور چند یہودی طلبہ کے احساسات اس سے مجروح ہوتے ہیں۔ یہ اقدام اس وقت منظر عام پر آیا، جب کہ ایک نامعلوم یہودی طالب علم

واشنگٹن /24 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) باوقار جارج واشنگٹن یونیورسٹی نے سواستک پر امتناع عائد کرنے پر غور شروع کردیا ہے۔ یہ ہندوؤں اور بدھ مت کے پیروؤں کی ایک مقدس علامت ہے۔ عہدہ داروں کا خیال ہے کہ یہ نازی علامت کے مماثل ہے اور چند یہودی طلبہ کے احساسات اس سے مجروح ہوتے ہیں۔ یہ اقدام اس وقت منظر عام پر آیا، جب کہ ایک نامعلوم یہودی طالب علم نے گزشتہ ماہ دورہ ہند سے واپسی پر جس نے اس کی تصویر جو سواستک کے ساتھ لی گئی تھی، یونیورسٹی کے خبر نامہ کے بورڈ میں پیش کی، جس میں یہودی برادری کی اکثریت ہے۔ برادری کے ایک رکن نے سواستک دیکھ کر خیال کیا کہ یہ کسی قسم کی دھمکی ہے اور پولیس کو مطلع کردیا۔ چند گھنٹوں کے اندر وضاحت کردی گئی۔ شکایت کنندہ طالب علم کو بھی محسوس ہو گیا کہ یہ کوئی دھمکی نہیں ہے۔ پولیس نے تحقیقات بند کردی ہیں۔سواستک آریہ نسل کی علامت ہے اور اس کا کسی مذہب سے کوئی تعلق نہیں۔ ہٹلر اور شمالی ہند کے ہندو بھی آریہ نسل سے تعلق رکھتے تھے۔

TOPPOPULARRECENT