امن، سلامتی کیلئے اجتماعی کوششوں کی ضرورت:راجناتھ

نئی دہلی، 9 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے امن اور سلامتی برقرار رکھنے کو عالمی چیلنج قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ اس کے لئے پوری دنیا کو کوششیں کرنے کی ضرورت ہے ۔راجناتھ سنگھ نے سٹی مانٹیسری اسکول لکھنؤ کے زیر اہتمام منعقدہ عالمی چیف ججوں کے 18 ویں اجلاس کے افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے یہاں کہا کہ امن اور سلامتی برقرار رکھناموجودہ ماحول میں پوری دنیا کے لئے بڑا چیلنج بن چکا ہے ۔ مختلف ممالک میں تشددتیزی سے پھیل رہا ہے ، لہذا دنیا کے تمام ممالک کو اسے روکنے کے لئے مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے .وزیر داخلہ نے کہا کہ امن اور سلامتی کسی بھی ملک کے لئے نہیں بلکہ پوری دنیا کے لئے تشویش کی وجہ بن گئی ہے ۔ ہندوستان اس چیلنج کا مقابلہ کرنے کے لئے پرعزم ہے اور یہ اس ملک اور لوگوں کا احترام کرتا ہے جو اس سمت میں کام کررہے ہیں۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس اجلاس میں، دنیا کے امن اور سلامتی کت لیے ٹھوس قدم اور عالمی امن کے لئے تجویزیں سامنے آئیں گی۔ سٹی مانٹیسری اسکول کے سربراہ جگدیش گاندھی نے کہا کہ دنیا کی آنے والی نسلیں سکھ اور امن سے کس طرح رہے اس بارے میں غور کرنے کا یہی مناسب وقت ہے اور دنیا کو اس کے لئے کام کرنے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس زمین کے ڈھائی ارب بچوں کو محفوظ اور پرامن مستقبل میں رہنے کا موقع ملے اس کے لئے ٹھوس اقدامات ہونے چاہئے ۔ ڈاکٹر گاندھی نے امید ظاہر کہ اس عالمی کانفرنس میں دنیا کی خوشحالی کے لئے کوشش کرنے کی ٹھوس پہل کی جائے گی۔ باقی سیمینار 10 نومبر سے 14 نومبر تک لکھنؤ میں منعقد کئے جائیں گے ۔ کانفرنس میں 57 ممالک کے ججز شرکت کر رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT