Thursday , November 23 2017
Home / پاکستان / امن مذاکرات میں کردار ادا کرنے پر آمادگی

امن مذاکرات میں کردار ادا کرنے پر آمادگی

وزیراعظم پاکستان کے خصوصی مشیرطارق فاطمی کا بیان‘ہندوستان بھی مدعو
اسلام آباد ۔ 6ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان اور افغانستان کے درمیان تعلقات کشیدہ نہیں ہیں اور پاکستان نے افغانستان کے کہنے پر اْس کی مدد کا اعلان کیاہے ۔پاکستان کے بموجب اگر افغانستان ملک میں قیام امن کے لیے تعطل کے شکار مذاکرتی عمل کو دوبارہ شروع کرنا چاہتا ہے تو پاکستان مصالحتی عمل میں معاون کا کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔وزیراعظم پاکستان نواز شریف کے معاونِ خصوصی طارق فاطمی نے بتایا کہ پاکستان افغانستان میں حقیقی امن و استحکام کا خواہاں ہے اور آئندہ ہفتے اسلام آباد میں منعقد ہونے والی ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں خطے کے دیگر ممالک کے ساتھ انہیںامور پر بات کی جائے گی۔ہندوستان کی وزیر خارجہ اور صدر افغانکی آمد کی ہنوز تصدیق باقی ہے ۔قبل ازیںاسلام آباد میں وزیراعظم نواز شریف کے زیر صدارت منعقدہ اجلاس میں ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کے ایجنڈے پرغور کیا گیا ۔اس اجلاس میں پاکستان کے قومی سلامتی کے مشیر ناصر جنجوعہ، ڈی جی آئی ایس آئی، مشیر خارجہ سرتاج عزیز اور معاونِ خصوصی طارق فاطمی شریک تھے۔

اس اجلاس میں ملک سلامتی اور خطے میں استحکام سے متعلق امور کا جائزہ لیا گیا۔طارق فاطمی نے بتایا کہ اس کانفرنس کا اہم مقصد افغانستان میں امن قائم کرنا ہے اور اسی سلسلے میں خطے کے دیگر ممالک کو مدعو کیا گیا ہے۔اسلام آباد میں شروع ہونے والی دو روزہ کانفرنس کا افتتاح پروگرام کے مطابق صدر افغانستان اشرف غنی اور وزیراعظم پاکستان کریں گے۔پیرس میں ماحولیاتی کانفرنس ـمیں اشرف غنی اور وزیراعظمکی ملاقات ہوئی تھی ۔پاکستان نے اس کانفرنس میں ہندوستان کو بھی مدعو کیا ہے لیکن دفتر خارجہ کے ترجمان نے بتایا کہہندوستانی عہدیداروں نے ہمیں وزیر خارجہ سشما سوراج کی آمد کے بارے باقاعدہ مطلع نہیں کیا ہے۔طارق فاطمی نے کہا کہ پاکستان نے ماضی میں بھی افغانستان میں طالبان سے مذاکرات میں معاون کا کردار ادا کیا ہے اور ہم اب بھی سہولت کار کا کردار ادا کرنے تیار ہیں۔گذشتہ کچھ ماہ سے افغانستان اور پاکستان کے درمیان کشیدگی کے بعد اس کانفرنس میں پاکستان کے موقف کے بارے میں طارق فاطمی کا کہنا تھا کہ ’دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کشیدہ نہیں ہیں اور پاکستان نے افغانستان کے کہنے پر اْس کی مدد کی ہے۔‘’افغانستان نے پاکستان سے مصالحتی عمل شروع کروانے کی درخواست کی تھی اور پاکستان افغانستان کی قیادت میں شروع ہونے والے مصالحتی عمل میں معاون کا کردار ادا کرنا چاہتا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT