Saturday , November 25 2017
Home / Top Stories / انانیت کو ختم کرتے ہوئے اتحاد کے ساتھ کام کرنے کی ضرورت

انانیت کو ختم کرتے ہوئے اتحاد کے ساتھ کام کرنے کی ضرورت

مسرز ظہیر الدین علی خاں ، غدر ، ومن مشرم و دیگر کا خطاب
شمس آباد ۔ 28 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : شمس آباد کے موضع پالماکول میں بام سینا اور بھارت مکتی مورچہ کے پانچ روزہ اجلاس کے چوتھے دن جناب ظہیر الدین علی خاں منیجنگ ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے اپنی مخاطبت میں کہا کہ آج کے دور میں ہر شخص سوشیل میڈیا سے متاثر ہے ۔ کروڑوں افراد سوشیل میڈیا پر موجود رہتے ہیں ۔ ہمیں اپنی آواز کو بھی سوشیل میڈیا کے ذریعہ عوام تک پہنچانا چاہئے ۔ جناب ظہیر الدین علی خاں نے مزید کہا کہ ہمیں اپنی انانیت کو ختم کرتے ہوئے اتحاد کے ذریعہ کام کرنے کی ضرورت ہے تب ہی ہم اپنے مقصد میں کامیاب ہوسکتے ہیں ۔ جب تک ہم ایک نہیں ہوں گے مسائل کا خاتمہ ناممکن ہے جو یہ پورے ملک پر اپنی حکمرانی کے ذریعہ آپس میں لڑوا کر خود حکومت کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ 2014 کی بی جے پی کی جیت آخری ہے آئندہ جو بھی حکومت بنے گی سیکولر حکومت ہی ہوگی ۔ ہماری کامیابی کے لیے ہم اپنے بچوں کو اعلیٰ تعلیم دے کر انہیں اعلیٰ عہدوں پر فائز کریں تب ہی ہماری غربت ، مجبوری و دیگر مسائل حل ہوں گے ۔ تعلیم کے ذریعہ ہمیں ہر شعبوں میں ملازمتیں حاصل کرنا ہوگا ۔ چند افراد بی سی ، ایس سی ، ایس ٹی اور اقلیتوں میں اتحاد کو ختم کرتے ہوئے ملک پر حکومت کرنے کا ارادہ کررہے ہیں ان کے ارادوں کو ہمیں ناکام بنانے کے لیے اتحاد اور اعلیٰ تعلیم حاصل کر کے ہی پورا کرسکتے ہیں ۔ غدر نے اپنی مخاطبت میں کہا کہ بام سینا سبھی طبقوں کی ترقی کے لیے کام کررہی ہے ۔ اس سے ہر شخص کو جڑ کر کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ تب ہی ہم شرپسندوں کے مقاصد کو ناکام بناسکتے ہیں ۔ ایک طبقہ ہمیں تعلیم ، ملازمت و دیگر شعبوں میں ناکام بناکر وہ خود اعلیٰ تعلیم حاصل کرتے ہوئے تمام طبقوں کو کم تر بنانے کی کوشش میں مصروف ہے ۔ غدر نے اپنے خصوصی انداز میں گیتوں کے ذریعہ عوام کو متاثر کیا ۔ ومن مشرم بھارت مکتی مورچہ نیشنل صدر نے کہا کہ برہمنس دیگر تمام طبقوں پر حکومت کرنے کے لیے دیگر طبقوں کے لوگوں میں انتشار پیدا کروا رہے ہیں ۔ وہ خود اعلیٰ تعلیم حاصل کررہے ہیں اور تاریخ کو ان کے لحاظ سے پیش کرتے ہوئے برہمن سماج کو اونچا اور دوسروں کو نیچے ظاہر کررہے ہیں ۔ تعلیمی نصاب میں کئی تبدیلیاں کر کے طلباء کے ذہن کو تبدیل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ان کے مقصد کو ہمیں ناکام بنانے کی ضرورت ہے ۔ اس اجلاس میں وی ایل تنگ بھارت مکتی مورچہ صدر ، مولانا عیسیٰ منصوری ، پریم کمار گدم ، دتوپرساد ، سابق منسٹر اترپردیش ، پروفیسر ناگیشور راؤ کے علاوہ دیگر نے بھی خطاب کیا ۔ اس اجلاس میں ہزاروں کی تعداد میں عوام موجود تھی ۔۔

TOPPOPULARRECENT