Tuesday , September 25 2018
Home / Top Stories / اناؤ اجتماعی عصمت ریزی : بی جے پی رکن اسمبلی کے بھائی اتل سنگھ سینگر گرفتار

اناؤ اجتماعی عصمت ریزی : بی جے پی رکن اسمبلی کے بھائی اتل سنگھ سینگر گرفتار

مقدمہ واپس لینے سے انکار پر متاثرہ کے والد شدید مارپیٹ کے بعد فوت ، تحقیقات کیلئے ایس آئی ٹی کی تشکیل
لکھنؤ۔ 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) اناؤ اجتماعی عصمت ریزی معاملے میں حکومت ِ اترپردیش نے ہر طرف سے پڑنے والے زبردست دباؤ کے بعد بالآخر معاملے کی تحقیقات کیلئے ایس آئی ٹی کی تشکیل دے دی ہے۔ متاثرہ لڑکی نے اس معاملے میں مقامی رکن اسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر سمیت کئی افراد پر اجتماعی عصمت ریزی کا الزام عائد کیا تھا جبکہ دوسری طرف متاثرہ کے والد کے ساتھ بری طرح مارپیٹ کرنے کے جرم میں منگل کو رکن اسمبلی کے بھائی اتل سنگھ سینگر کی گرفتاری عمل میں آئی ہے۔ اس معاملہ میں اب تک پانچ ملزمین کی گرفتاری ہو چکی ہے۔ ریاست کے پولیس ڈپٹی انسپکٹر جنرل پروین کمار نے یہ اطلاع دی۔ انہوں نے بتایا کہ رکن اسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر کے بھائی اتل سینگر کو پولیس کی کرائم برانچ نے اچل گنج سے گرفتار کیا ہے۔ اتل پر متاثرہ کے والد کی پٹائی کرنے کا الزام ہے۔ انہوں نے بتایا کہ دیگر ملزمین کی تلاش جاری ہے۔انہوں نے بتایا کہ متاثرہ کے والد سریندر سنگھ کے پوسٹ مارٹم کے بعد ان کا اناؤ کے گنگا گھاٹ پر آخری رسوم ادا کی جا رہی ہے۔ موقع پر ان کے خاندان اور پولیس کے افسران موجود ہیں۔ قابل غور ہے کہ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے اناؤ واقعہ کو سنجیدگی سے لیتے ہوئے کل کہا تھا کہ اس معاملہ میں قصورواروں کو بخشا نہیں جائے گا۔ اس معاملہ میں بی جے پی کے رکن اسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر، ان کے بھائی اور کچھ حامی ملزم ہیں۔ اس معاملہ میں ماکھی تھانہ انچارج سمیت 6 پولیس اہلکاروں کو ڈیوٹی میں لاپرواہی برتنے کے الزام میں معطل کیا جا چکا ہے۔رکن اسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر کے بھائی اور اس کے ساتھیوں پر الزام ہے کہ کورٹ میں زیر التوا مقدمے کو واپس لینے سے انکار کرنے پر متاثرہ کے والد سریندر سنگھ کو پیٹ پیٹ کر نیم مردہ کر دیا۔ اتنا ہی نہیں اس کے خلاف مقدمہ درج کرا دیا تھا۔ پٹائی کی وجہ سے علاج کے دوران انہوں نے دم توڑدیا۔ کافی دباؤ کے بعد بھی لڑکی کی والدہ کی جانب سے دی گئی تحریر میں رکن اسمبلی کے بھائی کا نام پولیس نے درج نہیں کیا۔اس واقعہ کے خلاف لڑکی نے وزیر اعلی کی رہائش گاہ پر خودکشی کرنے کی کوشش کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT