Sunday , February 25 2018
Home / شہر کی خبریں / انتخابات سے قبل 12% تحفظات دیں گے یا نہیں؟ کانگریس

انتخابات سے قبل 12% تحفظات دیں گے یا نہیں؟ کانگریس

وعدے تو بہت کئے ہیں صاحب ، عمل کب کریں گے؟ دیگر امور پر بھی عمل باقی
l انتخابی منشور میں 12 فیصد کا ذکر لیکن عمل نہیں
l مشن کاکتیہ و بھاگیرتا پر عمل ہو رہا ہے

حیدرآباد /10 نومبر ( سیاست نیوز ) ایوان اسمبلی سے چیف منسٹر کے سی آر مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات دلانے کا جھانسہ دیتے ہوئے بیوقوف بنارہے ہیں۔ 11 نومبر کو پرانے شہر سے گاندھی بھون تک کانگریس پارٹی 12 فیصد مسلم تحفظات کیلئے ریالی منظم کی جارہی ہے ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اُتم کمار ریڈی نے کہا کہ 12 فیصد مسلم تحفظات کا وعدہ ٹی آر ایس کے انتخابی منشور میں شامل تھا ۔ تاہم مشن کاکتیہ اور مشن بھاگیرتا ٹی آر ایس کے منشور میں شامل نہیں تھے ۔ دونوں پراجکٹس پر عمل آوری ہو رہی ہے اور ہزاروں کروڑ روپئے خرچ کئے جارہے ہیں ۔ لیکن 12 فیصد مسلم تحفظات کی بل کو 7 ماہ قبل اسمبلی اور کونسل دونوں ایوانوں میں منظور کیا گیا لیکن ابھی تک 12 فیصد مسلم تحفظات کے معاملے میں پیشرفت ہوئی ہے ۔ اس کے بارے میں ارکان اسمبلی کو کوئی علم ہے نہ عام مسلمان اس سے واقف ہے ۔ اقتدار حاصل کرنے کے 4 ماہ میں مسلمانوں سے کہا گیا وعدہ پورا کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کے سی آر مسلمانو ںکے ووٹ بٹورنے میں کامیاب ہوگئے لیکن جب عمل کا وقت آیا تو وزیر اعظم نریندر مودی سے بات ہونے اور وزیر اعظم سنجیدہ ہونے کا دعوی کرتے ہوئے 12 فیصد مسلم تحفظات ملنے کی امید کا اظہار کرتے ہوئے دل خوش باتیں کرتے ہوئے نہ صرف اسمبلی میں اراکین کو گمراہ کر رہے ہیں بلکہ تلنگانہ کے 50 لاکھ مسلمانوں کو تسلی دیتے ہوئے آرام و چین کی نیند سلانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے کہا کہ اگر واقعی چیف منسٹر کے سی آر مسلمانوں کی فلاح و بہبود کے معاملے میں سنجیدہ ہے تو سدھیر کمیشن کی جانب سے 15 ماہ قبل پیش کی گئی رپورٹ میں تحفظات کے علاوہ جن امور پر مسلمانوں کے مسائل کی نشاندہی کی گئی تھی کم از کم اس پر بھی عمل آوری نہیں ہوئی ۔ ٹی آر ایس اقتدار کے 40 ماہ مکمل ہونے کے باوجود مسلمانوں سے منسلک ادارہ جات ، اردو اکیڈیمی اقلیتی کمیشن اور حج کمیٹی کی ہنوز تشکیل عمل میں نہیں آئی جب وزیر اعظم سے 12 فیصد مسلم تحفظات کا تیقن مل گیا ہے تو سپریم کورٹ جانے کی بات کیوں کی جارہی ہے ۔ کانگریس پارٹی 12 فیصد مسلم تحفظات کے حق میں ہے ۔ اسمبلی اور کونسل میں پیش کردہ بل کی تائید کرچکی ہے ۔ مگر چیف منسٹر کے سی آر کی نیت پر شکوک ہے ۔ کیا چیف منسٹر تلنگانہ مقررہ وقت پر مشن کاکتیہ کے کاموں کی عدم تکمیل پر عوام سے ووٹ نہ مانگنے جس طرح اعلان کیا ہے اسی طرح 12 فیصد مسلم تحفظات کی عدم ادائیگی کی صورت میں عوام سے ووٹ نہ مانگنے کا اعلان کرسکتے ہیں ۔ اسمبلی اجلاس میں صروف ٹائم پاس کیا جارہا ہے ۔ وعدے کے مطابق آج تک وقف بورڈ کو قانونی اختیارات نہیں دئے گئے ۔ کانگریس نے مسلم تحفظات کا وعدہ کیا ۔ 5 کے بجائے 4 فیصد تحفظات دیا جس سے لاکھوں مسلمانوں کو فائدہ پہونچا ہے ۔ 11 نومبر کو ملک کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزاد کے یوم پیدائش کے موقع پر پرانے شہر سے گاندھی بھون تک 12 فیصد مسلم تحفظات ریالی منظم کی جارہی ہے اور مولانا آزاد کو خراج پیش کرنے کیلئے گاندھی بھون میں ایک جلسہ عام کا بھی اہتمام کیا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT