Friday , November 24 2017
Home / سیاسیات / انتخابی شکست پر چیف منسٹر کیرالا چنڈی مستعفی

انتخابی شکست پر چیف منسٹر کیرالا چنڈی مستعفی

حکومت کے خلاف مہم کا جواب دینے میں ناکامی کا اعتراف
تھرواننتھا پورم ، 20 مئی (سیاست ڈاٹ کام) اسمبلی انتخابات میں کانگریس کی زیرقیادت یو ڈی ایف کی شکست کے پیش نظر چیف منسٹر کیرالا اویمن چنڈی نے آج اپنے عہدہ سے استعفیٰ دیدیا ہے ۔ چنڈی نے آج صبح 10-30 بجے راج بھون پہنچ کر اپنا استعفیٰ نامہ ریاستی گورنر پی ستاشیوم کو پیش کردیا بعد ازاں انہوں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کانگریس اور یو ڈی ایف کا مشترکہ اجلاس آئندہ ہفتہ طلب کیا گیا ہے جس میں انتخابی شکست اور تازہ سیاسی صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا ۔ یونائٹیڈ ڈیموکریٹک فرنٹ کو سی پی ایم کی زیر قیادت ایل ڈی ایف کے ہاتھوں شکست اٹھانی پڑی ۔ جسے حریف فرنٹ کے 91 کے مقابل صرف 47 نشستیں حاصل ہوئیں ۔ 72 سالہ چنڈی نے کہا کہ انتخابات میں شکست عارضی ہے اور کانگریس دوبارہ طاقتور بن کر ابھرے گی ۔ اپوزیشن لیڈر کی ذمہ داری سنبھالنے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ پارٹی میں کیا جائے گا ۔ سبکدوش چیف منسٹر کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ انہوں نے 5 سالہ میعاد کی تکمیل کی جب کہ ریاستی گورنر نے انہیں متبادل انتظامات تک چیف منسٹر کے عہدہ پر برقرار رہنے کا مشورہ دیا ہے ۔ مسٹر چنڈی نے کہا کہ گذشتہ 5 سال کے دوران انہیں مختلف چیلنجس کا سامنا رہا ہے ۔ لیکن یو ڈی ایف اور عوام کی تائید سے کامیاب حکومت چلائی ۔ تاہم انہوں نے یہ اعتراف کیا کہ حکومت کے خلاف غلط پروپگنڈہ کا جواب دینے میں ناکام ہوگئے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ عوام کی تائید کی بدولت یو ڈی ایف کے 14 وزراء دوبارہ انتخابات میں کامیاب ہوگئے ۔ لیکن میڈیا نے شکست خوردہ صرف 4 وزراء پر توجہ مرکوز کی ہے ۔ سبکدوش چیف منسٹر نے کہا کہ حکومت کے خلاف رسوا کن مہم اور تفرقہ پرستوں کی کارستانیوں سے یو ڈی ایف کو شکست اٹھانی پڑی لیکن اس میں عوام کا کوئی قصور نہیں ہے کیوں کہ عوام تک حکومت کی کامیابیاں پہنچانے میں ناکامی ہوئی ہے تاہم انہیں اس قدر شکست فاش کی توقع نہیں تھی ۔

TOPPOPULARRECENT