Thursday , November 15 2018
Home / Top Stories / انتخابی منشور ،امکانی شکست سے کے سی آر کے خوف کا ثبوت

انتخابی منشور ،امکانی شکست سے کے سی آر کے خوف کا ثبوت

ٹی آر ایس عوام سے ووٹ مانگنے کے حق سے محروم: چندر شیکھر ریڈی
حیدرآباد۔/17اکٹوبر، ( سیاست نیوز ) قومی تلگودیشم پارٹی رکن پولیٹ بیورو و سابق رکن پارلیمان آر چندر شیکھر ریڈی نے صدر تلنگانہ راشٹرا سمیتی و نگرانکار چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہاکہ آئندہ دنوں ریاست میں منعقد ہونے والے مجوزہ قبل از وقت اسمبلی انتخابات میں اپنی شکست سے خوفزدہ رہنے کا گزشتہ دن جاری کردہ انتخابی منشور ہی اس کا واضح ثبوت ہے۔ ٹی آر ایس کے گزشتہ دن جاری کردہ انتخابی منشور پر اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے چندر شیکھر ریڈی نے کہا کہ تعلیم یافتہ بے روزگار نوجوانوں کیلئے بے روزگاری بھتہ اسکیم کے تعلق سے 13 اگسٹ کو چیف منسٹر تلنگانہ نے مضحکہ اُڑایا تھا ۔ انہوں نے کے سی آر کو یہ بھی یادلایا کہ گھر گھر نل کنکشن کے ذریعہ پانی سربراہ نہ کرنے کی صورت میں عوام سے ووٹ نہ مانگنے کا اعلان کیا تھا۔ انہوں نے سوال کیا کہ آیا عوام کو پانی فراہم کیا گیا ؟ لہذا کس بنیاد پر اب عوام سے ووٹ مانگیں گے اور آیا ووٹ مانگنے کا کے سی آر کو اخلاقی حق حاصل ہے؟ اس کی وضاحت کرنے کے چندر شیکھر راؤ سے مطالبہ کیا۔ رکن پولیٹ بیورو قومی تلگودیشم پارٹی نے کہا کہ چیف منسٹر نے غریب عوام کو ڈبل بیڈ رومس تعمیر کرے فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا ۔ انہوں نے دریافت کیا کہ آیا اپوزیشن جماعتوں نے ڈبل بیڈ رومس مکانات تعمیر کرنے میں رکاوٹیں پیدا کی تھیں؟ ۔ چندر شیکھر ریڈی نے نگرانکار چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ کو ہدف ملازمت بنایا اور کہا کہ وہ گزشتہ زائد از چار سال کے دوران ریاست تلنگانہ کی ترقی کیلئے کیا اقدامات کئے واضح کرنے کے بجائے صرف چندرا بابو نائیڈو پر روز تنقید کا نشانہ بنانے کو اپنا طریقہ کار بنالیا ہے۔ انہوں نے پرزور الفاظ میں کہا کہ کے سی آر کب کس کو گالی گلوج کریں گے معلوم نہیں ہوگا، آئندہ دنوں ریاست کے عوام کو گالی گلوج کریں بھی تو کوئی تعجب کی بات نہیں ہوگی۔
عوام کو ٹی آر ایس پر بھروسہ نہیں، کے سی آر کانگریس کی

Top Stories

TOPPOPULARRECENT