Thursday , September 20 2018
Home / ہندوستان / انجینئر شوہرکی رہائی کیلئے بیوی کا پرسیکر کو مکتوب

انجینئر شوہرکی رہائی کیلئے بیوی کا پرسیکر کو مکتوب

وڈودرہ ۔ 12 ۔ نومبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : ایران میں دسمبر 2013 سے پھنسے ہوئے دو ہندوستانی انجینئرس میں سے ایک انجینئر کی بیوی نے گوا کے نئے وزیر اعلی لکشمی سکانت پرسیکر حکومت سے رجوع کرتے ہوئے اس کے شوہر کی عاجلانہ رہائی کے لیے اقدامات کرنے کی خواہش ظاہر کی ہے ۔ وڈودرہ کے ساکن 36 سالہ سانکیت پنڈیا اور اس کے ساتھی محمد حسین خاں ( ہریانہ ) کو گذ

وڈودرہ ۔ 12 ۔ نومبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : ایران میں دسمبر 2013 سے پھنسے ہوئے دو ہندوستانی انجینئرس میں سے ایک انجینئر کی بیوی نے گوا کے نئے وزیر اعلی لکشمی سکانت پرسیکر حکومت سے رجوع کرتے ہوئے اس کے شوہر کی عاجلانہ رہائی کے لیے اقدامات کرنے کی خواہش ظاہر کی ہے ۔ وڈودرہ کے ساکن 36 سالہ سانکیت پنڈیا اور اس کے ساتھی محمد حسین خاں ( ہریانہ ) کو گذشتہ سال ایران میں غیر قانونی طور پر نظر بند رکھا گیا ہے ۔ یاد رہے کہ گذشتہ سال ایک کمپنی کے ساتھ ان کے تنازعہ کو بنیاد بناتے ہوئے دونوں کی آجر کمپنی پاور انجینئرس ( انڈیا ) لمٹیڈ نے ان کے پاسپورٹس ضبط کرلیے تھے ۔ سانکیت کی بیوی پریتی نے پرسیکر کو ایک مکتوب تحریر کرتے ہوئے کہا کہ گوا کی کمپنی دونوں کے افراد خاندان سے گذشتہ ایک سال سے جھوٹے وعدے کررہی ہے اور

ہمیشہ یہی کہتی ہے کہ دونوں کو جلد از جلد ان کے ارکان خاندان سے ملوادیا جائے گا لیکن اب تک کچھ بھی نہیں کیا گیا ۔ اپنے مکتوب میں پریتی نے تحریر کیا ہے کہ کمپنی کے جھوٹے وعدوں کی وجہ سے دونوں خاندان اس وقت مصائب سے دوچار ہیں جس سے نہ صرف وہ بلکہ اس کے دو بچے اور بیوہ ساس ( ایلابین پنڈیا ) کو شدید مشکلات اٹھانی پڑرہی ہیں ۔ سانکیت پنڈیا ہمارے خاندان کی کفالت کرنے والے واحد شخص ہیں ۔ اور ان کے اس طرح ایران میں غیر قانونی قید کی وجہ سے دونوں خاندان ( سانکیت ۔ محمد حسین خان ) پریشانی کے عالم میں ہیں ۔ یاد رہے کہ اس سلسلہ میں ایلابین پنڈیا نے بھی ماہ جون میں وزیر اعظم نریندر مودی کو مکتوب تحریر کیا تھا جب کہ پریتی اور شبنم ( محمد حسین خان کی بیوی ) نے بھی وزیر اعلی گوا کے دفتر کے روبرو احتجاج منظم کرنے کی دھمکیاں دی تھیں ۔

TOPPOPULARRECENT