Wednesday , September 26 2018
Home / اضلاع کی خبریں / انجینئیرنگ میڈیسن کیلئے محدود داخلے

انجینئیرنگ میڈیسن کیلئے محدود داخلے

محبوب نگر /25 اگست ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ضلع بھر میں صرف 2 انجینئیرنگ کالجس کو ہی کونسلنگ کا اہل قرار دیا گیا ہے ۔ جبکہ ضلع میں 9 انجینئیرنگ کالجس چلائے جارہے ہیں ۔ آل انڈیا ٹیکنیکل ایجوکیشن انسٹی ٹیوٹ کے قوانین کے مطابق کالجس کا معیار جیسے لیباریٹیز کوالیفائڈ ٹیچنگ اسٹاف کی عدم موجودگی کے علاوہ بنیادی سہولتیں موجود نہ ہونے سے 7 کالجس

محبوب نگر /25 اگست ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ضلع بھر میں صرف 2 انجینئیرنگ کالجس کو ہی کونسلنگ کا اہل قرار دیا گیا ہے ۔ جبکہ ضلع میں 9 انجینئیرنگ کالجس چلائے جارہے ہیں ۔ آل انڈیا ٹیکنیکل ایجوکیشن انسٹی ٹیوٹ کے قوانین کے مطابق کالجس کا معیار جیسے لیباریٹیز کوالیفائڈ ٹیچنگ اسٹاف کی عدم موجودگی کے علاوہ بنیادی سہولتیں موجود نہ ہونے سے 7 کالجس کو اس سال ویب کونسلنگ میں جاریہ سال نااہل قرار دیاگیا ہے جس کے نتیجہ میں 3 ہزار نشستیں گھٹ کر صرف 840 تک محدود ہوگئی ہیں ۔ جبکہ ریاست تلنگانہ میں 315 انجینئیرنگ کالجس کے منجملہ صرف 141 کالجس کو ہی جاریہ سال اہل قرار دیا گیا ہے ۔ ضلع کے کوالیفائیڈ انجینیئرنگ کالجس میں جے پی این سی ای ، دھرماپور اور دیورکدرہ دشامل ہیں ۔ ان دونوں کالجس میں صرف 840 طلباء کو ہی داخلہ مل سکتا ہے ۔ اسی طرح فارمیشی ، بائیو ٹکنالوجی کی نشستوں میں بھی کمی کی گئی ہے ۔ ضلع میں صرف 3 فارمیسی کالجس کو ہی منظوری ملی ہے ۔ ایمسیٹ میں کوالیفائیڈ طلباء کیلئے اس ماہ کی 14 تا 23 تک سرٹیفکیٹس کی تنقیح کی گئی تھی ۔ جس میں 1837 طلباء نے حصہ لیا ۔ ذرائع کے مطابق جن کالجس کو نااہل قرار دیا گیا ہے ان کالجس کے انتظامیہ منظوری کے حصول کیلئے دوڑ دھوپ کر رہے ہیں ۔ انہیں توقع ہے کہ دوسرے مرحلے کی کونسلنگ تک ان کو منظوری حاصل ہوگی ۔ طلباء تنظیموں کا الزام ہے کہ ریاستی حکومت فیس ری امبرسمنٹ کی رقم بچانے کیلئے یہ سازش کر رہی ہے ۔ غریب طلباء جو فنی تعلیم حاصل کرنے کیلئے دل و جان سے محنت کرکے رینک حاصل کر رہے ہیں ان حالات میں اپنے مستقبل کو لیکر تشویش کا شکار ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT