Monday , November 20 2017
Home / ہندوستان / اندرا دور کے دولتمندبمقابلہ غریب سے تقابل

اندرا دور کے دولتمندبمقابلہ غریب سے تقابل

مودی کی نوٹ بندی اندرا  پروگرام کے مماثل  : سی آئی آئی کے صدر نوشاد فوربس
نئی دہلی ۔ 15جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) کرپشن بمقابلہ نوٹ بندی کے موضوع پر مباحث میں حصہ لیتے ہوئے سی آئی آئی کے صدر نوشاد فوربس نے ’’ برے پرانے دنوں ‘‘کی یاد دہانی کی جبکہ اندرا گاندھی کے دور حکومت میں غریب بمقابلہ دولتمند افراد پروگرام جاری تھا ۔ انہوں نے کہا کہ دولت کی تقسیم بددیانتی کے ساتھ مربوط نہیں کی جانی چاہیئے ۔ ہمیں دیانتداری سے مالدار بننے کا حق حاصل ہے ۔ وہ پی ٹی آئی کو انٹرویو دے رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن پر مباحثہ نوٹ بندی کے بعد دولتمند بمقابلہ غریب پروگرام بن گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میرے خیال میں یہ غلط ہے ‘ اس کو دولتمند بمقابلہ غریب مباحثہ کے طور پر نہیں دیکھا جانا چاہیئے اس کو دیانتدار بمقابلہ بددیانت افراد کے طور پر اور دیانت ۔ بددیانت مباحثہ کے طور پر دیکھا جانا چاہیئے ۔ غریب بمقابلہ امیر  کے طور پر نہیں ۔ عمارت اور بددیانتی کے درمیان تعلق انتہائی پریشان کن ہے ۔ 1970ء کی دہائی  کی یاد دلاتی ہے جب کہ اندرا گاندھی کا دور حکومت تھا ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان گذشتہ 25سال میں اس دور سے بہت آگے نکل آیا ہے ۔ لفاظی کا زور نئی معیشت پر ہونا چاہیئے  ۔ انہوں نے خبردار کیا کہ ہمیں 1970کی دہائی میں واپس نہیں جانا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس تعلق کے بارے میں بعض اوقات ہم نے سنا ہے مالدار اور بددیانتی انتہائی پریشان کن تعلق ہے ‘ اس کے ذریعہ ہم پرانے دنوں میں واپس پہنچ جاتے ہیں جو اندرا گاندھی کا دور تھا ۔ انہوں نے کہا کہ معیشت گذشتہ 25سال میں بہت آگے نکل آئی ہے ‘ ہمیں واپس نہیں جانا ہے اس لئے مالدار اور بددیانت دو ایسے الفاظ ہیں جنہیں غیر مربوط کرنا ضروری ہے ۔ انہوں نے اس بات کو بکواس قرار دیا کہ مالدار افراد غریب افراد کی بہ نسبت زیادہ بددیانت ہوتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں دیانتدار مالداروں کا بھی اتنا ہی احترام کرنا چاہیئے جتنا کہ ہم دیانتدار غریبوں کا کرتا ہے ۔ اس سوال پر کہ حکومت کو اس مباحثہ سے ترک تعلق کرنا چاہیئے یا نہیں ‘ فوربس نے کہا کہ حکومت کے نقطہ نظر سے عوام کی پالیسی اور سیاست کے بموجب دولت کے اعتبار سے انہیں قابل احترام ہونا چاہیئے اور اس بات کی شناخت ہونی چاہیئے کہ بعض چیزیں عوام کی آرزو ہوتی ہیں لیکن وہ انہیں حاصل نہیں کرسکتے ۔ اس سوال پر کہ وہ 1970 کی دہائی میں واپس جانے کی بات کیوں کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے تاجر طبقہ کو یہی تاثر دیا ہے ۔70کی دہائی کے دنوں میں یہ عام نظریہ تھا کہ مالدار افراد برے ہوتے ہیں  ۔

TOPPOPULARRECENT