Sunday , November 19 2017
Home / Top Stories / اندرا گاندھی کا غریبی ہٹاؤ نعرہ حصول مقصد میں ناکام

اندرا گاندھی کا غریبی ہٹاؤ نعرہ حصول مقصد میں ناکام

صرف بی جے پی ہی عوام کی ترقی و خوشحالی کی ضامن، وزیر اعظم مودی کا دعویٰ
بالاسور( اڈیشہ )۔ /2جون، ( سیاست ڈاٹ کام ) کانگریس کے ’ غریبی ہٹاؤ ‘ نعرہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے آج کہا ہے کہ جن لوگوں نے یہ نعرہ دیا تھا ان کا ارادہ نیک تھا لیکن اس وعدہ کی تکمیل کیلئے اختیار کردہ طریقہ کار بالکلیہ غلط تھا۔ اپنی حکومت کے دو سالہ جشن پر اڈیشہ کے ساحلی ٹاؤن میں ایک ریالی کو مخاطب کرتے ہوئے ملک میں متوازن ترقی کی ضرورت کو اُجاگر کیا اور اس بات پر حیرت کا اظہار کیا کہ قدرتی وسائل ہونے کے باوجود مشرقی علاقہ ہنوز پسماندہ کیوں ہے؟۔ اڈیشہ، مشرقی اتر پردیش، مغربی بنگال، بہار اور آسام کو ترقی کی سمت گامزن کرنے کا عہد کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ غریبوں کی فلاح و بہبود کیلئے ان کی حکومت نے کئی ایک اسکیمات شروع کی ہیں، سابق وزیر اعظم اندرا گاندھی کے ’ غریبی ہٹاؤ ‘ نعرہ پر انگشت نمائی کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گذشتہ 60 سال سے ہم غریبی ہٹاؤ نعرہ سنتے آرہے ہیں۔ گوکہ یہ نعرہ دینے والوں کی نیت پر شک و شبہ نہیں کیا جاسکتا لیکن انسداد غربت کیلئے جو راستہ اختیار کیا گیا وہ بالکلیہ غلط ہے کیونکہ غربت، بیروزگاری اور امراض میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت صرف دولتمندوں کیلئے نہیں ہے بلکہ غریبوں کی فلاح و بہبود کی ذمہ دار بھی ہے جسے غربت کے خلاف جدوجہد کرنے کی ضرورت ہے، اور جب تک مسئلہ کا سائینٹفک حل تلاش نہیں کیا جاتا اسوقت تک غربت کا خاتمہ نہیں ہوسکتا۔ نریندر مودی نے کہا کہ ملک کے پسماندہ علاقوں کی ترقی پر حکومت نے توجہ مرکوز کردی ہے تاکہ سرکاری اسکیمات سے غرباء اور مستحق افراد استفادہ کرسکیں۔ انہوں نے ایک سوال کیا کہ مشرقی ریاستوں میں قدرتی وسائل بالخصوص کوئلہ کے ذخائر ہونے کے باوجود یہاں کے عوام دوسری ریاستوں کو منتقل ہونے پر مجبور کیوں ہیں۔ انہوں کہا کہ دیگر ریاستوں کے مقابل بی جے پی کی زیر اقتدار ریاستیں تیزی کے ساتھ ترقی کی سمت گامزن ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ بی جے پی ورکرس کی حیثیت سے میرا منتر صرف ترقی ہے اور بی جے پی کی زیر اقتدار ریاستوں میں ترقی و تعمیر زورو شور سے جاری ہیں اور آپ دیکھ سکتے ہیں کہ اڈیشہ جیسی ریاستیں کس قدر پسماندگی کا شکار ہیں۔انہوں نے یہ ادعا کیا کہ بی جے پی کا دوسرا نام ترقی ہے۔ اگر ہم غربت، بیروزگاری کا خاتمہ اور معیار زندگی میں تبدیلی چاہتے ہیں تو ترقی کرنے کی ضرورت ہے جو کہ تمام مسائل کا واحد حل ہے اور ہم’’ سب کا ساتھ ۔ سب کا وکاس ‘‘ پر ایقان رکھتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT