Monday , June 25 2018
Home / شہر کی خبریں / اندھے پن کے واقعات کو کم کرنے پر تبادلہ خیال کیلئے ورکشاپ

اندھے پن کے واقعات کو کم کرنے پر تبادلہ خیال کیلئے ورکشاپ

آئی اے پی بی ، ساؤتھ ایسٹ ایشیا ریجنل چیر ڈاکٹر تارا پرساد داس کی پریس کانفرنس

آئی اے پی بی ، ساؤتھ ایسٹ ایشیا ریجنل چیر ڈاکٹر تارا پرساد داس کی پریس کانفرنس
حیدرآباد۔ 18 نومبر (سیاست نیوز) انٹرنیشنل ایجنسی فار دی پریوینشن آف بلائینڈنیس (IAPB) اور اس کے پارٹنرس کی جانب سے اندھے پن کو کم کرنے پر تبادلہ خیال اور منصوبہ کیلئے ایک ورکشاپ 18 تا 20 نومبر منعقد کیا جارہا ہے۔ آج یہاں ایک پریس کانفرنس سے مخاطب کرتے ہوئے ڈاکٹر تارا پرساد داس، آئی اے پی بی، ساؤتھ ایسٹ ایشیا ریجنل چیر و وائس چیر ایل وی پرساد آئی انسٹیٹیوشنس نے کہا کہ IAPB اور اس کے پارٹنرس کا حیدرآباد میں اجلاس منعقد ہورہا ہے جس میں آئندہ پانچ سال میں جنوب مشرقی ایشیا میں اندھے پن کو 25 فیصد تک کم کرنے کی حکمت عملی بنائی جائے گی اور اس سلسلے میں تبادلہ خیال کیا جائے گا۔ ڈاکٹر تارا پرساد داس نے بتایا کہ موتیابند اندھے پن کا بڑا سبب ہے۔ 40 تا 49 فیصد لوگ اس سے متاثر ہوتے ہیں۔ کالا موتیا بھی اس کا سبب ہے۔ اس خطہ میں دنیا کے مقابل سب سے زیادہ لوگ اندھے پن کا شکار ہورہے ہیں اور اس طرح کے اندھے پن کے 80 فیصد واقعات قابل علاج ہوتے ہیں۔ مسٹر جی ناگیشور راؤ چیر، ایل وی پرساد آئی انسٹیٹیوٹ نے کہا کہ 2002-10ء کے درمیان اندھے پن کے کیسیس میں 30 فیصد کی کمی ہوئی اور اگر ایسا ہی برقرار رہا تو ہندوستان میں 25 فیصد کے نشانہ کے مقابل 50 فیصد تک اندھے پن کے واقعات کو کم کیا جاسکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT