Saturday , September 22 2018
Home / ہندوستان / انشورنس بل پر سلیکٹ کمیٹی کی مہلت میں توسیع

انشورنس بل پر سلیکٹ کمیٹی کی مہلت میں توسیع

نئی دہلی۔/25نومبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) انشورنس شعبہ میں بیرونی سرمایہ کاری کے اضافہ کیلئے متعلقہ ایکٹ میں ترمیم پر رپورٹ پیش کرنے کیلئے پارلیمنٹ کی سلیکٹ کمیٹی کو مزید دو ہفتوں 12ڈسمبر تک مہلت دی گئی ہے ۔تاہم اپوزیشن جماعتوں نے مہلت کی توسیع کے طریقہ کار پر اندیشے ظاہر کئے ہیں۔ بی جے پی رکن چندن مترا کی زیر قیادت سلیکٹ کمیٹی کو 28نومبر تک

نئی دہلی۔/25نومبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) انشورنس شعبہ میں بیرونی سرمایہ کاری کے اضافہ کیلئے متعلقہ ایکٹ میں ترمیم پر رپورٹ پیش کرنے کیلئے پارلیمنٹ کی سلیکٹ کمیٹی کو مزید دو ہفتوں 12ڈسمبر تک مہلت دی گئی ہے ۔تاہم اپوزیشن جماعتوں نے مہلت کی توسیع کے طریقہ کار پر اندیشے ظاہر کئے ہیں۔ بی جے پی رکن چندن مترا کی زیر قیادت سلیکٹ کمیٹی کو 28نومبر تک رپورٹ پیش کرنا تھا۔ چندن مترا نے جب آخری تاریخ میں 12ڈسمبر تک توسیع کیلئے پارلیمنٹ میں قرارداد پیش کی تو سی پی ایم رکن پی راجیو نے کہاکہ اس قرارداد سے کمیٹی ارکان لاعلم ہیں اور اس مسئلہ کو کمیٹی میں تبادلہ خیال کے بعد چندن مترا توسیع کی مہلت طلب کرسکتے ہیں بشرطیکہ انہیں اختیار دیا جائے۔ سی پی ایم رکن نے جب یہ کہا تو کمیٹی کے دیگر ارکان نے ڈیرک اوبرین ( ترنمول کانگریس )، جے ڈی سیلم ( کانگریس) نے شکایت کی کہ وہ بھی صدر نشین کی قرارداد سے واقف نہیں ہیں۔

دریں اثناء وزیر فینانس ارون جیٹلی نے بتایا کہ سلیکٹ کمیٹی کے ارکان جے پی نندہ اور مختار عباس نقوی کو مرکزی کابینہ میں شامل کرلیا گیا ہے۔ ان کی جگہ دو نئے ارکان وی پی سنگھ بدنورے اور رنگا سائی رام کرشنا کو آج نامزد کرلیا گیا۔انہوں نے کہا کہ اگر چیکہ کمیٹی کی مزید وقت طلب ہے لیکن وہ یہ بھی فیصلہ کریں گے کہ آیا کمیٹی کو برقرار رکھا جائے یا پھر تحلیل کردیا جائے۔ وزیر فینانس نے کہا کہ اگر ایوان کی یہ خواہش ہے کہ کمیٹی کو مزید مہلت نہ دی جائے تو حکومت کل ہی انشورنس بل پیش کرنے کیلئے آمادہ ہے۔ تاہم اپوزیشن ارکان نے اصرار کیا کہ قرارداد سے دستبرداری اور کمیٹی کی میعاد میں توسیع کے مسئلہ پر تبادلہ خیال کیا جائے لیکن چندن مترا نے اس مشورہ کو نظرانداز کردیا جبکہ ارون جیٹلی نے قواعد کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کمیٹی کی توسیع پر ایوان ہی فیصلہ کرسکتا ہے جس کے بعد قرارداد کو ندائی ووٹ سے منظور کرلیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT