Tuesday , January 23 2018
Home / سیاسیات / انشورنس میں راست غیر ملکی سرمایہ کاری کو بی جے پی کی تائید کی امید

انشورنس میں راست غیر ملکی سرمایہ کاری کو بی جے پی کی تائید کی امید

نئی دہلی 11 جولائی (سیاست ڈاٹ کام )غیر ملکی سرمایہ کاری کی حد انشورنس کے شعبہ میں 49 فیصد کردینے کے فیصلے کا دفاع کرتے ہوئے مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے اعتماد ظاہرکیا کہ مجوزہ اضافہ کو ان کی پارٹی بی جے پی کی تائید حاصل ہوگی ۔فی الحال راست غیر ملکی سرمایہ کاری خانگی انشورنس کمپنیوں میں 26 فیصد کی حد تک کی جاسکتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ

نئی دہلی 11 جولائی (سیاست ڈاٹ کام )غیر ملکی سرمایہ کاری کی حد انشورنس کے شعبہ میں 49 فیصد کردینے کے فیصلے کا دفاع کرتے ہوئے مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے اعتماد ظاہرکیا کہ مجوزہ اضافہ کو ان کی پارٹی بی جے پی کی تائید حاصل ہوگی ۔فی الحال راست غیر ملکی سرمایہ کاری خانگی انشورنس کمپنیوں میں 26 فیصد کی حد تک کی جاسکتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عنقریب منصوبہ بندی کمیشن کے ان کی حکومت میں کردار کی وضاحت کرتے ہوئے بیان دیں گے ۔ گذشتہ ماہ آزادانہ تخمینہ کے دفتر نے کہا تھا کہ منصوبہ بندی کمیشن کنٹرول کمیشن کی حیثیت سے کام کرے گا اور اصلاحات و مسائل حل کرنے کے ادارے کے طور پر کام کرے گا ۔ دیڑھ ماہ قبل بی جے پی برسر اقتدار آئی تھی لیکن نئی حکومت نے ہنوز نائب صدر نشین منصوبہ بندی کمیشن کے بارے میں کوئی اعلان نہیں کیا ۔ مونٹک سنگھ اہلوالیہ کے جانشین کا اعلان ہنوز باقی ہے ۔ جیٹلی نے پی ٹی آئی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عنقریب اس کا اعلان کریں گے ۔ ان سے بی جے پی حکومت کے منصوبہ بندی کمیشن کے موقف کی وضاحت طلب کی گئی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ انتظار کریں عنقریب اس مسئلہ کو حل کردیا جائے گا ۔ تاہم انہوں نے تفصیلات کا انکشاف نہیں کیا ۔ وزیر اعظم کو جو تخمینہ روانہ کیاگیا ہے اس میں دانشوروں پر مشتمل ایک نئے ادارے کے قیام کی سفارش کی گئی ہے جس میں اس شعبہ کی ماہرانہ معلومات رکھنے والوں کو شریک کیا جائے گا اور وہ منصوبہ بندی کمیشن کی جگہ لے گا۔ آئی ای او کے ڈائرکٹر جنرل اجئے جبھر نے کہا کہ یہ واضح ہے کہ منصوبہ بندی کمیشن اس کی موجودہ نوعیت اور کارکردگی کے اعتبار سے ہندوستان کی ترقی میں مددگار نہیں بلکہ ایک رکاوٹ ثابت ہوا ۔انہوں نے کہا کہ ان کے خیال میں وسیع پیمانے پر اصلاحات آسان کام نہیں ہے اس لئے بہتر ہوگا کہ منصوبہ بندی کمیشن کی جگہ ایک نئے ادارے کو دی جائے جو ریاستوں کے نظریات میں مددگار ثابت ہو اور طویل مدتی نظریاتی اور اصلاحات میں مدد فراہم کرسکے ۔ ارون جیٹلی نے کہا کہ حکومت سونے کی درآمد پر عائد تحدیدات برخواست کرنے پر غور کررہی ہے لیکن ایسا صرف اسی صورت میں ممکن ہوسکے گا جب معاشی صورتحال بہتر ہوجائے ۔ مرکزی وزیر فینانس نے کہا کہ فی الحال سونے کی درآمد پر امتناع کی برخواستگی نا ممکن ہے ۔ ملک کی صورتحال ہنوز آرام دہ سطح پر نہیں آئی ہے ۔ واضح طور پر لچکدار پالیسیوں کی ضرورت ہے لیکن یہ ناقابل تبدیل نہیں ہوںگی ۔ انہیں وقت کے تقاضوں کے مطابق تبدیل کیا جائے گا ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ حکومت کرنٹ اکاونٹ کے خسارہ اور مالیاتی خسارہ کے مسائل کا محتاط جائزہ لے رہی ہے ۔ سی اے ڈی اور مالیاتی خسارہ دونوں ان کے خیال میں محتاط تجزیہ کا تقاضہ کرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے سونے پر درآمداتی ڈیوٹی میں 10 فیصد اضافہ کردیا ہے جبکہ آر بی آئی نے درآمد پر تحدیدات عائد کی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT