Monday , October 22 2018
Home / شہر کی خبریں / انقلابی ادیبوں کی تنظیم ’ وراسم ‘ کو ملک کے دستور پر ایقان نہیں

انقلابی ادیبوں کی تنظیم ’ وراسم ‘ کو ملک کے دستور پر ایقان نہیں

عالمی تلگو کانفرنس میں مدعو نہیں کیا گیا ، ٹی آر ایس کی وضاحت
حیدرآباد ۔13۔ ڈسمبر (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے وضاحت کی ہے کہ انقلابی ادیبوں کی تنظیم ’’وراسم‘‘ کو ملک کے دستور پر ایقان نہیں ہے اور انہیں مدعو کیا جائے تو وہ شرکت نہیں کرتے ، اسی لئے عالمی تلگو کانفرنس میں اس تنظیم کو مدعو نہیں کیا گیا ہے۔ گورنمنٹ وہپ پی راجیشور ریڈی نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے 15 ڈسمبر سے شروع ہونے والی عالمی تلگو کانفرنس میں انقلابی ادیبوں کی تنظیم کو مدعو نہ کئے جانے کی وضاحت کی۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ تہذیب اور تلگو زبان کی عظمت رفتہ کی بحالی کیلئے یہ کانفرنس منعقد کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ تلی کی گلپوشی کے ذریعہ اس کانفرنس کا آغاز ہوگا۔ افتتاحی اجلاس میں نائب صدر جمہوریہ وینکیا نائیڈو اور گورنرس ای ایس ایل نرسمہن اور سی ایچ ودیا ساگر راؤ شرکت کریں گے۔ کانفرنس کے اختتامی اجلاس میں صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند شریک ہوں گے ۔ انہوں نے کہا کہ کانفرنس میں 8000 سے زائد مندوبین کی شرکت متوقع ہے۔ راجیشور ریڈی نے کانگریس قائدین کی جانب سے کانفرنس پر کی جارہی تنقیدوں کو افسوسناک قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ کانفرنس کے انعقاد سے عالمی سطح پر تلنگانہ ریاست کی علحدہ شناخت ابھرے گی۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی راست نگرانی میں بہترین انتظامات کئے گئے ہیں ۔ ٹی آر ایس کے رکن قانون ساز کونسل کے پربھاکر نے عالمی تلگو کانفرنس پر کانگریس کی تنقیدوں کو مسترد کردیا اور کہا کہ کانگریس پا رٹی ہر مسئلہ سے سیاسی فائدہ اٹھانے کی کوشش کر رہی ہے۔ کانفرنس کے انعقاد کا مقصد تلگو زبان کو عالمی سطح پر فروغ دینا اور تلنگانہ میں بحیثیت پہلی سرکاری زبان عمل آوری کو یقینی بنانا ہے۔

TOPPOPULARRECENT