Sunday , November 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / انقلابی مرکز سدی پیٹ سے چیف منسٹر کو خصوصی دلچسپی

انقلابی مرکز سدی پیٹ سے چیف منسٹر کو خصوصی دلچسپی

مسٹر چندر شیکھر راؤ اپنی سیاسی زندگی کے مقام آغاز سے نئے اضلاع کا اعلان کریں گے
سدی پیٹ۔/9اکٹوبر، ( کلیم الرحمن کی رپورٹ ) تلنگانہ ریاست کے قیام کے ڈھائی سال بعد وزیر اعلیٰ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے  علاقہ سدی پیٹ کے مسئلہ کی یکسوئی کرتے ہوئے سدی پیٹ کو ضلع کا درجہ دینے کا اعلان کیا ہے جس کا سرکاری طور پر11اکٹوبر کو دسہرہ تہوار کے دن اعلان کیا جائے گا۔ سدی پیٹ کے سی آر کا آبائی مقام ہے اور انہوں نے اپنی سیاسی زندگی کا آغاز بھی اسی سدی پیٹ سے کیا ہے اور آگے ترقی کرتے کرتے ریاست تلنگانہ کے وزیر اعلیٰ کی کرسی پر براجمان ہوگئے ہیں۔ یہاں اس بات کا ذکر ضروری ہے کہ سدی پیٹ ایک انقلابی مرکز رہا ہے یہاں سے شروع کردہ تحریکیںکامیابی سے ہمکنار ہوئے ہیں اور 1969 کے بعد تلنگانہ تحریک کا آغاز ہواوہ بھی یہیں سے کے چندر شیکھر راؤ نے آغاز کیا جس کی وجہ سے آج سدی پیٹ کو نہ صرف تلنگانہ بلکہ ملک بھر میں نمایاں مقام حاصل ہوا چونکہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ سدی پیٹ کو نمایاں حیثیت دلوانا چاہتے ہیں اور اس کے لئے انہوں نے تاریخی جدوجہد کی تھی جس کا نتیجہ آج سدی پیٹ کے عوام دیکھ رہی ہے ۔11اکٹوبر سے سدی پیٹ کی عوام ایک نئے ضلع کے محل و قوع میں سانس لیں گے ۔ سدی پیٹ سے اپنے دلی لگاؤ کا ثبوت دیتے ہوئے مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ضلع کے اعلان کے لئے سدی پیٹ کا ہی انتخاب کیا اور وہ یہاں سے ہی سدی پیٹ کو نئے ضلع کا درجہ دینے کا بھی اعلان کریں گے۔ اس بات میں کوئی دور رائے نہیں ہوسکتی کہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے اپنے قریبی رفقاء بشمول اپنے فرزند کے ٹی آر ، دختر شریمتی کویتا اور اپنے بھانجے مسٹر ٹی ہریش راؤ کے ساتھ  جو تحریک علحدہ ریاست تلنگانہ کے لئے شروع کی تھی وہ آج ایک حقیقت کا روپ دھار چکی ہے اور مسٹر کے چندر شیکھر راؤمسلسل ریاست اور عوام کی ترقی کے لئے کوشاں ہیں۔ اس بات کا ذکر بھی ضروری ہے کہ سدی پیٹ اب 22منڈلوں پر مشتمل ضلع ہوگا جس میں ضلع کریم نگرکے 4 منڈل لئے گئے ہیں حسن آباد رورل، حسن آباد اربن،کوہیڈہ ، شنکرم۔ ضلع ورنگل کے 3 منڈل مدور، چیریال، کمراویلی، دوباک، منڈل دوباک، مردوڈی، دولت آباد،رے پول، گجویل، منڈل گجویل جگدیو پور، ملگ ، ورگل، مڑکو، سدی پیٹ کے 4 منڈلس کنڈہ پاک و اربن ورورل ، ……کنگنور۔ سدی پیٹ کا جملہ رقبہ 343168 کیلو میٹر ہے اور آبادی 972812 رہے گی۔ اس ضلع میں نئے دفاتر کا قیام بھی عمل میں لایا گیا ہے اور سدی پیٹ میں پولیس کمشنریٹ بھی قائم کیا جارہا ہے۔وزیر اعلیٰ چاہتے ہیں کہ عوام کو اپنے مسائل کی یکسوئی کیلئے دور مقامات پر جانا نہ پڑے، نئے ضلع سدی پیٹ سے وزیر اعلیٰ ریاست میں تشکیل کردہ تمام نئے اضلاع کا بھی اعلان کریں گے۔ اس موقع پر ان کے ہمرا مقامی رکن اسمبلی وزیر ٹی ہریش راؤ بھی رہیں گے۔

TOPPOPULARRECENT