Wednesday , June 20 2018
Home / دنیا / انڈونیشیاء میں غیرشادی شدہ جوڑوں کو برسرعام سزاء

انڈونیشیاء میں غیرشادی شدہ جوڑوں کو برسرعام سزاء

بانڈہ اچے ۔ 12 جون (سیاست ڈاٹ کام) انڈونیشیاء کے صوبہ اچے میں جہاں سخت ترین اسلامی قوانین نافذ ہیں، یونیورسٹی سے تعلق رکھنے والے طلباء و طالبات کے تین غیرشادی شدہ جوڑوں کو آج اس وقت سزاء کے طور پر برسرعام بید کی چھڑیوں سے مارا گیا جب وہ الگ الگ مقامات پر تنہائی میں ایک ساتھ وقت گذارتے ہوئے پکڑے گئے۔ اچے کے صوبائی دارالحکومت بانڈہ اچے

بانڈہ اچے ۔ 12 جون (سیاست ڈاٹ کام) انڈونیشیاء کے صوبہ اچے میں جہاں سخت ترین اسلامی قوانین نافذ ہیں، یونیورسٹی سے تعلق رکھنے والے طلباء و طالبات کے تین غیرشادی شدہ جوڑوں کو آج اس وقت سزاء کے طور پر برسرعام بید کی چھڑیوں سے مارا گیا جب وہ الگ الگ مقامات پر تنہائی میں ایک ساتھ وقت گذارتے ہوئے پکڑے گئے۔ اچے کے صوبائی دارالحکومت بانڈہ اچے میں واقع مرکزی مقام پر جب 18 اور 23 سال کی درمیانی عمر کے 3 لڑکوں اور لڑکیوں کو چھڑیوں سے مارا گیا۔ وہاں موجود ایک ہزار منچلے افراد پر مشتمل پرجوش ہجوم نے شدید نعرہ بازی کی۔ علاوہ ازیں 40 سال سے زائد عمر کی ایک عورت کو بھی بدکاری کے الزام کے تحت برسرعام درے لگائے گئے۔ بید کی چھڑی سے 4 مرتبہ مارے جانے کے بعد یہ عورت بیہوش ہوگئی۔ بعدازاں عہدیداروں نے اس کو دی جانے والی سزاء روک دی۔

TOPPOPULARRECENT