انڈونیشیاء میں غیر ملکیوں کی سزائے موت پر برہمی

جکارتہ۔ 18؍جنوری (سیاست ڈاٹ کام)۔ برازیل اور نیدرلینڈس نے انڈونیشیاء سے اپنے سفیروں کو واپس طلب کرلیا اور اظہار برہمی کیا جب کہ انڈونیشیاء نے ان کی درخواستوں کو مسترد کرتے ہوئے ان کے دو شہریوں کو منشیات کے دیگر 4 اِسمگلروں کے ساتھ فائرنگ اسکواڈ کے حوالہ کردیا۔ دیگر مجرموں میں ویتنام، ملاوی، نائیجیریا اور انڈونیشیاء کے شہری شامل تھ

جکارتہ۔ 18؍جنوری (سیاست ڈاٹ کام)۔ برازیل اور نیدرلینڈس نے انڈونیشیاء سے اپنے سفیروں کو واپس طلب کرلیا اور اظہار برہمی کیا جب کہ انڈونیشیاء نے ان کی درخواستوں کو مسترد کرتے ہوئے ان کے دو شہریوں کو منشیات کے دیگر 4 اِسمگلروں کے ساتھ فائرنگ اسکواڈ کے حوالہ کردیا۔ دیگر مجرموں میں ویتنام، ملاوی، نائیجیریا اور انڈونیشیاء کے شہری شامل تھے۔ تمام 6 افراد نئے صدر جوکوویڈوڈو کے دور اقتدار میں سزائے موت یافتہ اولین افراد ہیں۔ انڈونیشیاء میں سخت انسداد منشیات قوانین موجود ہیں اور ویڈوڈو جنھوں نے اکٹوبر میں اپنا عہدہ سنبھالا تھا، انسانی حقوق کے علمبردار کارکنوں کو سزائے موت کی تائید کرتے ہوئے مایوس کردیا تھا۔ سزائے موت کو بین الاقوامی برادری کی جانب سے مسترد کیا جاچکا ہے اور کئی ممالک کے درمیان اسی وجہ سے تعلقات میں کشیدگی بھی پیدا ہوچکی ہے۔ برطانیہ کے سفیر کو بھی انڈونیشیاء سے طلب کیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT