Friday , December 15 2017
Home / کھیل کی خبریں / انڈو۔پاک سیریز کا 24 ڈسمبر کو آغاز ، مودی حکومت کی منظوری شرط

انڈو۔پاک سیریز کا 24 ڈسمبر کو آغاز ، مودی حکومت کی منظوری شرط

٭  سری لنکا میں مختصر سیریز کیلئے پی سی بی پوری طرح تیار
٭  پاکستان کرکٹ بورڈ کے معتبر ذریعہ کا بیان
کراچی ، 9 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے گزشتہ روز اعلان کردیا کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کافی تجسس والی باہمی کرکٹ سیریز 24 ڈسمبر اور 5 جنوری کے درمیان منعقد کی جائے گی بشرطیکہ اسے ہندوستانی حکومت سے منظوری حاصل ہوجائے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے معتبر ذریعہ کے مطابق اس سیریز کیلئے جن عبوری تواریخ پر بات چیت ہوئی ہے اس سے تین او ڈی آئیز اور دو ٹوئنٹی 20 میچز کی مختصر سیریز کا پتہ چلتا ہے۔ انھوں نے کہا، ’’یہ سیریز عین ممکن ہے سری لنکا میں اس طرح کھیلی جائے گی کہ دونوں ٹیمیں کولمبو سے ہی نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کو اپنے ٹورز کیلئے روانہ ہوجائیں‘‘۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ انڈین کرکٹ بورڈ (بی سی سی آئی) نے اشارہ دیا تھا کہ وہ اپنے کھلاڑیوں کو پاکستان کے خلاف سیریز سے قبل 10 تا 12 یوم کا آرام دینے کا خواہاں ہے۔ جہاں ہندوستان کو 6 یا 7 جنوری کو آسٹریلیا کا سفر کرنا ہوگا، وہیں پاکستان کو طئے شدہ پروگرام کے مطابق نیوزی لینڈ کو لمیٹیڈ اوور سیریز کیلئے 7 جنوری کو روانہ ہونا ہے۔ چنانچہ عین ممکن ہے دونوں ٹیمیں کولمبو سے راست طور پر اپنی منزلوں کیلئے روانہ ہوں گے۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان ہیڈکوچ وقار یونس نے بھی پی سی بی کو مطلع کیا تھا کہ اگر ہندوستان کے خلاف سیریز طئے ہوجاتی ہے تو وہ سری لنکا میں میچز سے قبل ایک ہفتہ طویل کیمپ چاہیں گے۔بورڈ کے ذریعہ کہا کہ ایسا امکان بھی ہے کہ یہ سیریز دو او ڈی آئیز اور دو T20 میچز تک گھٹائی جاسکتی ہے کیونکہ وقت تیزی سے گزر رہا ہے کہ پی سی بی ضروری انتظامی و دیگر انتظامات کی تکمیل کرسکے۔

’’پی سی بی کو اس حقیقت کو بھی ملحوظ رکھنا پڑے گا کہ کولمبو میں ڈسمبر میں برسات کا موسم رہتا ہے اور انھیں میچز کیلئے مقامات کا انتخاب سری لنکا کرکٹ کے ساتھ مشاورت میں احتیاط سے کرنا پڑے گا تاکہ خراب موسم یہ مقابلوں پر اثر نہ ڈالے۔ پی سی بی اس سیریز کی تیاریوں کے سلسلے میں سری لنکا کرکٹ بورڈ سے مستقل رابطے میں ہے اور اس کا کہنا ہے کہ حکومت ہند کی جانب سے اجازت ملتے ہی سری لنکن بورڈ کو بھی فوری طور پر گرین سگنل دیا جائے گا۔ چیرمین پی سی بی شہریار خان نے 7 ڈسمبر کو کہا تھا کہ پاکستان اور ہندوستان کے درمیان سیریز کے بارے میں حتمی فیصلہ وزیر خارجہ ہند سشما سوراج کے دورۂ پاکستان کے دوران ہو جائے گا۔ شہریار یہ بھی کہہ چکے ہیں کہ اگرچہ وقت بہت کم رہ گیا ہے لیکن وہ سری لنکن کرکٹ بورڈ کے تعاون سے تمام انتظامات کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے۔ چیرمین پی سی بی کا یہ بھی کہنا ہے کہ سلیکٹرز نے ہندوستان سے سیریز کے انعقاد کی صورت میں پاکستانی ٹیم کو حتمی شکل دے کر نام اُن کے حوالے کردیئے ہیں۔ دوسری جانب انڈین کرکٹ بورڈ بدستور اپنے موقف پرقائم ہے کہ انڈو۔پاک سیریز کا انحصار نریندر مودی زیرقیادت مرکزی حکومت کی اجازت پر ہے۔ صدر بی سی سی آئی ششانک منوہر نے گزشتہ روز آئی پی ایل (انڈین پریمیر لیگ) کی ٹیموں کی نیلامی کے موقع پر کہا تھا کہ وہ اس سیریز کے بارے میں کوئی پیش قیاسی نہیں کر سکتے اور اس کا فیصلہ ’’حکومت کو کرنا ہے، اسے کرنے دیں‘‘۔ جب اُن سے پوچھا گیا کہ حکومت کی جانب سے اجازت میں تاخیر کے سبب کیا یہ سیریز مختصر ہو سکتی ہے تو انھوں نے کہا کہ اس کا فیصلہ پاکستان کرکٹ بورڈ کو کرنا ہے کیونکہ وہ اس سیریز کے میزبان ہیں اور اس کے تمام تر انتظامات بھی انھیں کرنے ہیں۔ قبل ازیں بی سی سی آئی نے یہ سیریز متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں کھیلنے سے انکار کردیا تھا۔ تاہم اس نے سری لنکا میں یہ سیریز کھیلنے پر آمادگی ظاہر کی ، لیکن اس کے باوجود انڈین بورڈ اپنی حکومت سے اس کی اجازت ابھی تک حاصل نہیں کر سکا ہے۔

TOPPOPULARRECENT