انڈین مجاہدین رکن سبحان قریشی کی دہلی میں گرفتاری

شہر میں بھی ایک مقدمہ زیر التوا ۔ ایس آئی ٹی پوچھ تاچھ کریگی
حیدرآباد 22 جنوری (سیاست نیوز) دہلی پولیس کی اسپیشل سیل کی جانب سے گرفتار کئے گئے مبینہ انڈین مجاہدین کے رکن عبدالسبحان قریشی عرف توقیر کے خلاف حیدرآباد میں بھی ایک مقدمہ زیرالتواء ہے جس کے نتیجہ میں حیدرآباد کی اسپیشل انوسٹی گیشن ٹیم دہلی پہونچ کر اُس سے پوچھ گچھ کرے گی۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ سال 2008 ء میں سی سی ایس کی جانب سے ایک مقدمہ درج کیا گیا تھا جس میں اسٹوڈنٹس اسلامک موؤمنٹ آف انڈیا (سیمی) کے مبینہ ارکان کو ملزم بنایا گیا تھا۔ پولیس نے تعزیرات ہند کے مختلف دفعات بشمول مجرمانہ سازش اور ملک سے جنگ چھیڑنے جیسے سنگین دفعات کے تحت ایک مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کیا گیا تھا۔ سیمی کے سابق صدر صفدر حسین ناگوری، قمرالدین ناگوری اور دیگر کو اِس کیس میں ملزم بناتے ہوئے پولیس نے یہ دعویٰ کیا تھا کہ سیمی کے آلہ کاروں کی جانب سے شہر کے نوجوانوں کی مدد سے مبینہ طور پر وقارآباد کے اننت گیری ہلز میں ایک کیمپ قائم کرنے کا منصوبہ تیار کیا گیا تھا جس کا مقصد جہادی سرگرمیاں انجام دینا تھا۔ سی سی ایس پولیس کے عہدیداروں نے بتایا کہ عبدالسبحان قریشی سے تفتیش کے لئے ایس آئی ٹی کی ایک ٹیم دہلی روانہ کی جائے گی اور اُس کی تفتیش کے بعد اُسے شہر منتقل کرنے کا فیصلہ کیا جائیگا۔

TOPPOPULARRECENT