Wednesday , January 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / انکاؤنٹر تنازعہ میں آئی جی وزیر احمد کے تبادلہ کیخلاف احتجاج

انکاؤنٹر تنازعہ میں آئی جی وزیر احمد کے تبادلہ کیخلاف احتجاج

گلبرگہ ۔ 21 جنوری ۔(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) منادربدر انکاؤنٹر کیس میں شمال مشرقی رینج کے آئی جی وزیر احمد کے تبادلہ کے خلاف شہر کی ملی اور سیاسی و غیر سیاسی جماعتوں پاپولر فرنٹ آف انڈیا ،سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا(SDPI) ،کل ہند مجلس تعمیر ملت گلبرگہ کی جانب سے ایک عظیم ریالی منعقد کی گئی ، مسلم چوک سے منی ودھان سودھا تک نکالی گئی اس ری

گلبرگہ ۔ 21 جنوری ۔(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) منادربدر انکاؤنٹر کیس میں شمال مشرقی رینج کے آئی جی وزیر احمد کے تبادلہ کے خلاف شہر کی ملی اور سیاسی و غیر سیاسی جماعتوں پاپولر فرنٹ آف انڈیا ،سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا(SDPI) ،کل ہند مجلس تعمیر ملت گلبرگہ کی جانب سے ایک عظیم ریالی منعقد کی گئی ، مسلم چوک سے منی ودھان سودھا تک نکالی گئی اس ریالی میں شہر کے کئی علاقوں کے نوجوانوں نے جوش و خروش سے حصہ لیا۔ اس موقع پر کانگریس حکومت اور کانگریس کے مقامی قائدیں کے خلاف، بی جے پی کے خلاف،سنگھ پریوار کے خلاف نعرے لگائے گئے۔ اس ریالی میں ایک جنازہ جمہوریت اور کانگریس حکومت کا نکالا گیا ۔ ودھان سودھا پہونچ کراس کو جلایا گیا۔ سید حبیب الدین سرمست (SDPIضلعی سیکر یٹری) نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ــکہا کہ ’’اس معاملہ کی سی بی آئی انکوائری کرائی جائے۔اگر جلد سے جلد یہ تبادلہ روکا نہیں گیا تو آئندہ پارلیمانی انتخابات میںاسکا انجام بھگتنے کو تیار ہوجائے، ہم اس نا انصافی کو کبھی برداشت نہیں کرینگے،یہ ٹرانسفر روکا جائے، میلاد کے جھنڈے اور فلیکس پھاڑنے والوں کو سزا دی جائے ورنہ ہم احتجاج میں شدت پیدا کریں گے۔

مجلس تعمیر ملت کے ضلعی صدر ایڈوکیٹ قوام الدین جنیدی(وہاج بابا) نے اس موقع پر بات کرتے ہوئے کہا ’’ ہمیں ملیکارجن بنڈے کے ساتھ ہمدردی ہے،حکومت ان کے گھر والوں کو پچاس لاکھ نہیں ایک کروڑ روپے دے ۔شہر میں دفعہ 144لاگو ہونے کے باوجود مذہبی منافرت پھیلانے والی تنظیموں نے ریالیاں نکالی اور مسلم جھنڈے اور فلیکس جلائے ، حکومت انکے خلاف ایکشن لے۔ وزیر احمد صاحب کے ٹرانسفر کی ہم مذمت کرتے ہیں،یا تو سب کا ٹرانسفر کیا جائے،یا وزیر احمد صاحب کا بھی ٹرانسفر روکا جائے۔زخمی آفیسرس کو بھی مالی امداد دی جائے‘‘۔ پاپولر فرنٹ آف انڈیا کے ریاستی مجلس عاملہ کے رکن شاہد نصیر نے اپنے خطاب میں پاپولر فرنٹ کے مطالبات کو دہرایا اور ساتھ ہی کہا ’’ اس انکاؤنٹر میں بہت ساری باتیں مشکوک ہیں ، جن کا خلاصہ ہونا چاہئے، پولیس کو پورے انتظام کئے بغیر ملیکارجن بنڈے کی موت کا اعلان نہیں کرنا چاہئے تھا۔ہمارے تینوں مطالبات کی تکمیل تک ہم احتجاج کرینگے اور یہ احتجاج ریاستی سطح پر کیا جائیگا۔مذہب کی بنیاد پر پولیس ڈپارٹمنٹ کو تقسیم نہیں ہونے دیا جائیگا۔ ‘‘

TOPPOPULARRECENT