Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / انگلش میڈیم میناریٹی ریزیڈنشیل اسکولس میں تقررات کی سفارش

انگلش میڈیم میناریٹی ریزیڈنشیل اسکولس میں تقررات کی سفارش

اندرون دو ماہ تقررات متوقع ، 700 جائیدادیں ، 70 اسکولس میں 35 گرلز کے لیے مختص
حیدرآباد۔/24مارچ، ( سیاست نیوز) تلنگانہ میں اقلیتوں کیلئے قائم کئے جانے والے 70 انگلش میڈیم اقامتی اسکولس کیلئے پہلے مرحلہ میں 700 رکنی اسٹاف کے تقررات کیلئے تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کو سفارش کی گئی ہے۔ توقع ہے کہ تقررات کا یہ عمل اندرون دو ماہ مکمل ہوجائے گا جس کے بعد اقامتی اسکولس کے آغاز میں سہولت ہوگی۔ حکومت نے جون سے بیک وقت 70 اقامتی مدارس کے آغاز کا فیصلہ کیا ہے جن میں 35 گرلز اسکول ہوں گے۔ حکومت نے اقامتی اسکولس کیلئے علحدہ طور پر تلنگانہ میناریٹیز ریسیڈنشیل ایجوکیشنل انسٹی ٹیوشنس سوسائٹی قائم کی ہے جس کے صدر نشین ڈپٹی چیف منسٹر اور وزیر تعلیم کڈیم سری ہری ہیں۔ ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو عبدالقیوم خاں سوسائٹی کے نائب صدر نشین ہیں۔ اقامتی اسکولس کے کامیاب آغاز کیلئے عبدالقیوم خاں دن رات محنت کررہے ہیں اور وہ نہ صرف حیدرآباد بلکہ اضلاع میں ضلع کلکٹرس اور دیگر اعلیٰ عہدیداروں سے ربط میں ہیں۔ حکومت نے اسکولوں کیلئے 1960 رکنی اسٹاف کو منظوری دی ہے جبکہ آؤٹ سورسنگ پر 280 افراد کی خدمات حاصل کی جائیں گی۔ پہلے مرحلہ میں جن 700 رکنی اسٹاف کے تقررات کئے جارہے ہیں ان میں 70پرنسپالس، 350ٹی جی ٹی، 70فزیکل ایجوکیشن ٹیچر، 70اسٹاف نرس، 70 کرافٹ میوزک انسٹرکٹر اور 70سینئر اسسٹنٹس شامل ہیں۔ تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن سے خواہش کی گئی ہے کہ وہ جلد سے جلد تقررات کا عمل مکمل کرلے۔ جون سے کرایہ کی عمارتوں میں اسکولوں کا آغاز ہوگا اور ہر ضلع میں عمارتوں کے انتخاب کا عمل تقریباً مکمل ہوچکا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ عمارتوں میں سہولیات کی فراہمی کا تخمینہ تیار کیا جارہا ہے۔ جاریہ سال حکومت نے بجٹ میں 350کروڑ روپئے اس اسکیم کیلئے مختص کئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق خانگی عمارتوں کے کرایہ کے مسئلہ پر تعطل برقرار ہے۔ عمارتوں کے مالکین مارکٹ ریٹ کے حساب سے کرایہ مقرر کرنے کا مطالبہ کررہے ہیں جبکہ حکومت سرکاری شرح پر کرایہ کی ادائیگی کے حق میں ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ اس شرط سے استثنیٰ کیلئے حکومت سے سفارش کی گئی ہے تاکہ عمارتوں کے مالکین کو زائد کرایہ ادا کیا جاسکے۔ حیدرآباد میں 7 اسکولوں کے آغاز کی تیاری ہے جو بہادر پورہ، آصف نگر، چارمینار، سعیدآباد، گولکنڈہ، مشیرآباد اور سکندرآباد کنٹونمنٹ علاقوں میں قائم کئے جائیں گے۔ بہادر پورہ میں بوائز اور گرلز کے اسکولس قائم ہوں گے جبکہ دیگر علاقوں میں آصف نگر، سعیدآباد اور کنٹونمنٹ میں صرف بوائز اسکول ہوں گے جبکہ مشیرآباد، گولکنڈہ اور چارمینار علاقہ میں گرلز اسکولس قائم ہوں گے۔ پانچویں تا ساتویں کلاس تک قائم کئے جانے والے اسکولوں میں ہر کلاس میں 2 سیکشن ہوں گے اور ہر سیکشن میں طلبہ کی تعداد 40ہوگی۔ زائد طلبہ کی صورت میں ضروری ٹسٹ کے ذریعہ انتخاب کیا جائے گا۔ اقلیتی اقامتی اسکولوں میں انگلش میڈیم کے طلبہ کا داخلہ عہدیداروں کیلئے کسی چیلنج سے کم نہیں ہے۔ اے کے خاں اس سلسلہ میں مختلف رضاکارانہ تنظیموں اور ماہرین تعلیم سے ربط میں ہیں اور اسکولوں میں طلبہ کے داخلہ کو یقینی بنانے کیلئے ہر شعبہ سے تعاون کی اپیل کررہے ہیں۔عادل آباد میں 6، نظام آباد 5 ، کریم نگر 8 ، کھمم 5 ، میدک 9 ، محبوب نگر 7، رنگاریڈی 9 ، نلگنڈہ 5اور ورنگل میں 4اسکولس کے قیام کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT