Saturday , December 15 2018

اوآخر جاریہ سال خانگی اسکول فیس میں باقاعدگی پر عمل

تروپتی راؤ کمیٹی رپورٹ کے بعد نئے قوانین و ضوابط طئے جائیں گے
حیدرآباد۔14ڈسمبر(سیاست نیوز) محکمہ تعلیم کی جانب سے جاریہ سال کے اواخر تک تروپتی راؤ کمیٹی کی رپورٹ پیش کرتے ہوئے ریاست میں خدمات انجام دے رہے خانگی تعلیمی اداروں کی فیس کو باقاعدہ بنانے کے اقدامات شروع کردیئے جائیں گے۔ باوثوق ذرائع کے مطابق شہر حیدرآباد کے علاوہ ریاست کے دیگر شہری اضلاع میں چلائے جانے والے اسکولوں کی فیس کو باقاعدہ بنانے کے مطالبہ میں شدت کو دیکھتے ہوئے حکومت کی جانب سے کمیٹی تشکیل دی گئی تھی اور کہا گیا تھا کہ ریاست میں خانگی اسکولوں کی فیس کا جائزہ لینے کے بعد اس سلسلہ میں قطعی فیصلہ کیا جائے گا۔ ریاستی حکومت کی جانب سے تشکیل دی گئی کمیٹی کی رپورٹ جاریہ ماہ کے اواخر میں منظر عام پر لائے جانے کے بعد محکمہ تعلیم کی جانب سے نئے قوانین و ضوابط طئے کئے جائیں گے اور ان پر عمل آوری کیلئے منڈل کے اساس پر کمیٹیوں کی تشکیل عمل میں لائی جائے گی۔ شہر حیدرآباد کے علاوہ اضلا ع کے کارپوریٹ تعلیمی اداروں کی جانب سے وصول کی جانے والی فیس پر اولیائے طلبہ کی برہمی کو دور کرنے کیلئے سرکاری سطح پر سخت گیر اقدامات کے متعلق غور کیا جارہاہے اور کہا جا رہاہے کہ تروپتی کمیٹی کی رپورٹ میں شامل سفارشات پر عمل آوری کیلئے سفارشات کا جائزہ لینے کے بعد ہی قطعی فیصلہ کیا جائیگا۔ محکمہ تعلیم کے عہدیداروں کے مطابق 80فیصد اسکولوں کی تمام تفصیلات کمیٹی کے پاس موجود ہیں اور مابقی اسکولوں کی جانب سے عدالت سے رجوع ہونے کے خدشات کا بھی جائزہ لیا جا رہاہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT